محسن عباس حیدر پر اہلیہ کی طرف سے تشدد اور بے وفائی کا الزام: اندرونی کہانی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اداکار محسن عباس حیدر (ڈی جے) کی اہلیہ کی جانب سے ان پر تشدد اور بے وفائی کے الزام کی گونج سوشل میڈیا پر ارتعاش پیدا کر رہی ہے۔ اداکار گوہر رشید نے ان الزامات کی تصدیق کر دی ہے۔

محسن عباس حیدر کی اہلیہ فاطمہ سہیل کی جانب سے ہفتہ اور اتوار کی شب اپنے شوہر پر عائد کیے جانے والے الزام کے بعد مرزا گوہر رشیدنے تشدد کی تصدیق کی ہے۔ انہوں نے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر بتایا کہ جو نا انصافی فاطمہ سہیل کے ساتھ ہوئی ہے وہ اس کے سیکنڈ ہینڈ گواہ ہیں کیونکہ فاطمہ نے اپنی پوسٹ میں تشدد کے جس واقعے کا تذکرہ کیا ہے وہ 2018 میں پیش آیا تھا اور میری دوست فاطمہ کو لے کر ہسپتال گئی تھی۔

مرزا گوہر رشید نے لکھا ’ فاطمہ میرے لیے بہن جیسی ہے، جب اس پر تشدد ہوا تو اس نے اپنی شادی بچانے اور اپنے بچے کے تحفظ کی فکر کی جس کے باعث ہم بھی خاموش ہوگئے لیکن اب اس نے خود ہی اس معاملے پر آواز اٹھائی ہے۔‘

اداکار نے کہا کہ ڈی جے جیسے لوگ معاشرے کیلئے خطرہ ہیں ، میں انہیں جذباتی ، بے رحم یا ذہنی بیمار کے طور پر نہیں بلکہ ایک خطرے کے طور پر دیکھتا ہوں، فاطمہ کو انصاف کے ساتھ مدد کی بھی ضرورت ہے۔

خیال رہے کہ مذاق رات کے اینکر پرسن محسن عباس حیدر پر ان کی اہلیہ فاطمہ سہیل نے اپنی ایک فیس بک پوسٹ کے ذریعے تشدد کا الزام عائد کیا تھا ۔ فاطمہ کے مطابق ڈی جے نے اسے اس وقت بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا جب وہ حاملہ تھی ۔ فاطمہ نے یہ الزام بھی عائد کیا تھا کہ جب ان کا لاہور میں بیٹا پیدا ہوا تو اس وقت ڈی جے کراچی میں ماڈل گرل نازش جہانگیر کے ساتھ رنگ رلیاں منا رہا تھا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •