حمیمہ ملک بھی گھریلو تشدد کا شکار رہی ہیں

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

گزشتہ دنوں محسن عباس حیدر کی اہلیہ کی جانب سے گھریلو تشدد کے خلاف آواز بلند کی گئی تھی اور اب اداکارہ حمیمہ ملک نے انکشاف کیا ہے کہ ماضی میں وہ بھی گھریلو تشدد کا شکار رہی ہیں ۔

31  سالہ اداکارہ نے انسٹاگرام اسٹوری شیئر کی جس میں انہوں نے لکھا کہ ‘اگرچہ اس کو کئی سال گزر گئے، مگر وہ وقت اور درد بھرے دن رات اب بھی مجھے ڈراتے ہیں، میں اس وقت 19یا 20 برس کی لڑکی تھی، جو اپنے خاندان کو بھی اپنے چیختے زخم نہیں دکھاسکی ۔

انہوں نے اپنی ذات سے شرمندگی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ’ میں نے اپنی زندگی کے 3 سال پرُتشدد شادی اور 7 سال کا ایک تعلق جس میں بھی تشدد کا سامنا رہا ، اس دوران میں نےاپنے لیے کچھ نہیں کیا۔

حمیمہ نے مزید انکشاف کرتے ہوئے لکھا کہ جب وہ اپنی اور اپنے گھر والوں کی زندگی کو بہتر بنانے کے لیے کام کر رہی تھیں اس وقت بھی انہیں ایک بار نہیں بلکہ کئی بار بدزبانی، دھمکیوں اور ایسے تشدد کا سامنا رہا جس نے اُن کی زندگی خطرے میں ڈال دی ۔

انہوں نے کہا کہ وہ اب بالکل بھی خاموش نہیں رہیں گی، ساتھ ہی انہوں نے اپنی اسٹوری کے آخر میں ہیش ٹیگ ’نو مور سائلنس‘ (اب خاموشی نہیں) لکھا۔

اس سے قبل بھی حمیمہ ملک خواتین پر تشدد کے خلاف پوسٹس شئیر کرتی رہی ہیں۔

اگرچہ حمیمہ نے اپنی اسٹوریز میں کسی کا نام ظاہر نہیں کیا تاہم سب جانتے ہیں کہ اداکارہ 2010 سے 2012 تک اداکار شمعون عباسی کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک رہ چکی ہیں۔

دوسری جانب فلم ‘’دی لیجنڈ آف مولا جٹ‘ کی ہدایت کارہ عمارہ حکمت نے حمیمہ ملک کی انسٹاگرام اسٹوری پر اپنا اظہار خیال کرتے ہوئے لکھا کہ ’حمیمہ تم ایک بہادر عورت ہومیں نے خود ان چیزوں کودیکھا اور مجھے خوشی ہے کہ تم خود کو اس صورتحال سے نکالنے میں کامیاب ہوگئی ہو۔

واضح رہے کہ اداکارہ نےاپنی بہن دعا ملک کے ساتھ محسن عباس حیدر کی اہلیہ فاطمہ سہیل کی حالت کا عینی شاہد ہونے کا دعویٰ کیا تھا اور اب انسٹاگرام پرانہوں نے خود بھی گھریلو تشدد کا شکار ہونے کا اعتراف کیا ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •