دہلی میں سیکس ورکر سے محبت کرنے والے نے شادی سے انکار پر قتل کر دیا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بھارت کی راجدھانی دہلی میں واقع جی بی روڈ کے جسم فروشی کے ایک اڈہ سے شروع ہونے والی پیار کی کہانی قتل کی ایک ہولناک واردات پر جا کر ختم ہوئی۔ یہاں کام کرنے والی ایک سیکس ورکر سے ایک شخص کو محبت ہوگئی اور وہ اس سے شادی کرنا چاہتا تھا۔ سیکس ورکر نے شادی کرنے سے انکار کر دیا تو اس شخص نے اس کا قتل کردیا ۔ محمد ایوب نام کے اس شخص نے پہلے سیکس ورکر کو راضی کرنے کی کافی کوشش کی اور کہا کہ تم یہ کام چھوڑ دو، ہم شادی کر لیتے ہیں لیکن جب وہ راضی نہیں ہوئی تو ملزم نے اس کے قتل کا منصوبہ بنا لیا۔

ملزم کی 2008 میں ریشما نام کی لڑکی سے شادی ہوئی تھی ، جس سے اس کے تین بچے بھی ہیں۔ تقریبا چار سال پہلے وہ جی بی روڈ پر اس سیکس ورکر کے رابطے میں آیا تھا۔ وقت گزرنے کے ساتھ ملزم اور اس سیکس ورکر کے درمیان پیار ہو گیا۔ ملزم سیکس ورکر پر کافی دنوں سے شادی کرنے کے لئے دباو ڈال رہا تھا لیکن سیکس ورکر کو ملزم کے شادی شدہ ہونے کا علم تھا۔ اس لئے اس نے شادی سے انکار کردیا۔ اس کے بعد ملزم اس کے قتل کی منصوبہ بندی کرنے لگا۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق ملزم ایک دن سیکس ورکر کے ساتھ باہر گیا، اس نے اپنے شرٹ میں چاقو چھپا رکھا تھا۔ روہنی میں بوانہ نہر کے پاس دونوں بات کرنے کیلئے رکے، اسی دوران ملزم نے سیکس ورکر کا گلا کاٹ کر قتل کر دیا اور اس کے جسم کے ٹکڑے کر کے نہر میں پھینک دیے۔

قتل کے اس خوفناک واقعے کی تفتیش دہلی پولیس کے اسپیشل سیل کو سونپی گئی جس نے جمعے کے روز ملزم کو گرفتار کر لیا۔ اسپیشل سیل کے ڈی سی پی نے بتایا کہ ہمیں اطلاع ملی تھی کہ ملزم فرار ہونے والا ہے اور کسی اور جگہ جا کر روپوش ہونے کی تیاری کر رہا ہے۔ لیکن ہم نے اسے فرار ہونے سے پہلے ہی گرفتار کر لیا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •