ایک سال میں کھانے پینے کی اشیا کتنی مہنگی ہوئیں؟

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

وفاقی ادارہ شماریات نے گزشتہ ایک سال کے دوران اشیائے خور و نوش کی مہنگائی کے اعداد و شمار جاری کر دیے۔ ادارہ شماریات کے مطابق ‎گزشتہ ایک سال میں 10 کلو گندم 29 روپے مہنگی ہوئی، جبکہ آٹے کا 10 کلو کا تھیلا 39 روپے مہنگا ہوا۔

ادارہ شماریات کی جاری کی گئی دستاویز میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ ایک سال میں چینی 20 روپے فی کلو جبکہ باسمتی چاول 6 روپے فی کلو مہنگے ہوئے۔

دستاویز کے مطابق ‎اگست 2018ء تا اگست 2019ء گائے کا گوشت 45 روپے فی کلو، ‎بکرے کا گوشت 84 روپے فی کلو جبکہ ‎زندہ برائلرمرغی ایک سال میں 61 روپے فی کلو مہنگی ہوئی۔

ادارہ شماریات کی دستاویز میں کہا گیا ہے کہ ‎ایک سال میں ڈھائی کلو کوکنگ آئل کا ڈبہ 82 روپے، مسور کی دال 12 روپے، مونگ کی دال 57 روپے، ماش کی دال 34 روپے اور چنے کی دال 13 روپے فی کلو مہنگی ہوئی۔

ادارہ شماریات کا مزید کہنا ہے کہ ‎ایک سال میں تازہ دودھ اور دہی سات روپے فی کلو مہنگے ہوئے، آلو 7 روپے، پیاز 23 روپے فی کلو مہنگی ہوئی۔

ادارہ شماریات کی دستاویز میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ‎ایک سال میں 200 گرام چائے کی پتی کی قیمت میں 16 روپے اضافہ ہوا ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •