شناختی کارڈ کی شرط سے کاروبار متاثر ہو رہے ہیں، ایف بی آر نے نرمی کا فیصلہ کر لیا: شبر زیدی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے شناختی کارڈ کی شرط میں نرمی کا فیصلہ کرلیا، چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے کہا ہے کہ شناختی کارڈ کی شرط کی وجہ سے کاروبار متاثر ہو رہے ہیں۔ کاروبار متاثر ہوں گے تو ٹیکس دینے کی سکت نہیں رہے گی۔ انہوں نے اپنے بیان میں اعتراف کیا کہ شناختی کارڈ کی شرط کی وجہ سے کاروبار متاثر ہو رہے ہیں۔

چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے کہا کہ 50 ہزار کی خریداری پر شناختی کارڈ کی شرط پر نرمی برتی جائے گی۔ شناختی کارڈ کی شرط ختم کرنے کے مطالبے پر دو راستے ہیں۔ شناختی کارڈ کی شرط یا تو ختم کردیں یا کوئی درمیانی راستہ نکالیں۔

چیئرمین ایف بی آر سید شبر زیدی کا کہنا تھا کہ بے نامی جائیدادوں کے خلاف کارروائی کیلئے آرڈیننس تیار کرلیا ہے۔ بے نامی جائیدادو ں کے خلاف پہلے سے موجود قانون میں کوئی بڑی تبدیلی نہیں کر رہے۔ اس قانون میں کچھ ترمیم کر کے کارروائیوں کو مزید تیز کریں گے۔ سید شبر زیدی نے کہا کہ آئی ایم ایف ٹیم کے ساتھ مذاکرات جاری ہیں۔ آئی ایم ایف کو ٹیکس محصولات پر مطمئن کر لیں گے۔ واضح رہے ایف بی آر نے دوسری سہ ماہی کیلئے 12 کھرب 95 ارب روپے کا ہدف مقرر کیا ہے۔

ایف بی آر کو پہلی سہ ماہی میں 100 ارب روپے ٹیکس شارٹ فال کا سامنا رہا۔ دوسری سہ ماہی کے دوران صرف اکتوبر میں 376 ارب روپے ٹیکس جمع کیا جائے گا۔ جولائی تا ستمبر تقریباً 960 ارب روپے اوراکتوبر تا دسمبر 12 کھرب 95 ارب روپے ٹیکس جمع کرنے کی منصوبہ بندی ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •