ہم اتنے نااہل ہیں کہ پانچ برس تک پتہ نہیں چلا کہ خصوصی عدالت غیر آئینی تھی: حفیظ اللہ نیازی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

تجزیہ کار حفیظ اللہ نیازی نے کہا ہے کہ ہم اتنے نا اہل لوگ ہیں کہ ہم کو آج تک یہ پتہ نہیں چلا کہ خصوصی عدالت غیر آئینی عدالت ہے۔ قوم کی کثیر تعداد ججوں کو بڑے احترام سے دیکھتی ہے۔ پاکستان کے ساتھ بھونڈا مذاق کیا گیا ہے۔

جیونیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے حفیظ اللہ نیازی نے کہا کہ ہائیکورٹ کی عدالت کے فیصلے سے پہلے یہ دیکھنا ہے کہ یہ مقدمہ چار سال تک چلتا رہا لیکن اس پر کیا یہ سو رہے تھے؟ کبھی کہا جاتا تھا کہ پرویز مشرف بیمار ہیں، ان کی کمر میں تکلیف ہورہی ہے اور کبھی وہ پارٹی کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم اتنے نا اہل لوگ ہیں کہ ہم کو آج تک یہ پتہ نہیں چلا کہ یہ خصوصی عدالت غیر آئینی عدالت ہے ۔

حفیظ اللہ نیازی کا کہنا تھاکہ قوم کی کثیر تعداد ججوں کو بڑے احترام سے دیکھتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان لوگوں نے پاکستان کے ساتھ آ ج بھونڈا مذاق کیا ہے۔ عمران خان کا اپنا بیانیہ کیا تھا؟ ایران نے قاسم سلیمانی کے ساتھ کیا سلوک کیا ہے اور پرویز مشرف نے ڈاکٹر عبد القدیر سے معافی منگوائی تھی۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

One thought on “ہم اتنے نااہل ہیں کہ پانچ برس تک پتہ نہیں چلا کہ خصوصی عدالت غیر آئینی تھی: حفیظ اللہ نیازی

  • 14/01/2020 at 11:10 pm
    Permalink

    بالکل سچ ۔۔ بولا ۔۔ قاسم سلیمانی کی قربانی دیں ایران نے اور تمام
    دنیا کو بے یوقوف بنایا ۔۔ امریکی اڈوں پہ حملہ کرنے سے پہلے ان کو اطلاع دیں ۔۔ اور بات خصوصی عدالت کی اس خصوصی عدالتوں نے اس ملک کے سینکڑوں لوگوں کو سزے موت دیں ۔۔ اور لاکھوں کو عمر قید کی سزاے کیا وہ بھی غیرقانونی تھی ۔۔ یا صرف طاقتور کو سزا غیرقانونی تھی ۔۔ اور کیا خصوصی عدالتوں کے یہ جج بھی غیر قانونی تھی ۔۔ اور سپریم کورٹ کے حکم پہ بننے والے عدالتیں ہای کورٹ غیر قانونی قرار دیتے ھیں ۔۔ مطلب ہای کورٹ سپریم کورٹ سے بڑی عدالت بن گیا۔۔ جب انصاف کا نظام اک ملک میں ایسا ھوں ۔۔ تو اس ملک کا مستقبل کیا ھوگا۔۔ یا سزا اس ملک کے غریب عوام کو ملنے کیلے یہ عدالتیں بنای گہی ۔۔ اس ملک کے عدالتیں نظام کینسر شدہ مریض کی ھیں ۔۔ اور وہ کینسر جو ڈاکٹر مریض کا اک حیصہ کاٹ کر تاکہ باقی مریض کا جسم بچ جاوے لیکن افسوس اب یہ مریض کا تمام بدن کینسر نے اپنے لپیٹ میں لے لیا ھے ۔۔ ان میں بڑے پیمانے پہ اصلاحات کی ضرورت ھیں ۔۔ورنہ تباہکن اثرات اس ملک پہ پڑیں گے ۔۔۔۔ لہذا ملک کے تمام ادارے سیاستدانوں نے تباہ کہے ۔۔ کوی بھی مخلص قیادت اس ملک میں نہی ۔۔ بس انفرادی اور اپنے ذات تک ان سیاستدانوں کی سوچ محدود ھیں ۔۔۔ ورنہ انقلابی اصلاحات لانا مشکل نہی تھی ۔۔ لیکن تمام سیاستدان اپنے ذاتی مفاد تک محدود ہوکر ڈیکٹیروں کے بچے بھی بن جاتے ھیں ۔۔ اور جمہوریت کے نام پہ بھی عوام کو دھوکے دیتے ھیں ۔۔ ان بے حس سیاستدانوں سے تو بہتر ھے کہ صدارتی نظام
    ھوں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *