شادی کے بغیر کرکٹر ویوین رچرڈٓز کے بچے کی ماں بننے والی اداکارہ نینا گپتا کو پچھتاوا  

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

 سینئر بھارتی اداکارہ نے نینا گپتا نے ویسٹ انڈین کرکٹر ویوین رچرڈٓز سے اپنے تعلق کو لے کر جدوجہد کی کہانی بیان کی ہے۔ اداکارہ نینا گپتا کو ایک مضبوط خاتون اور سنگل مدر کے طور پر پہچانا جاتا ہے لیکن یہاں تک پہنچنا ان کیلئے آسان نہیں تھا۔ اداکارہ نینا گپتا نے شادی کے بغیر اپنی بیٹی مسابہ گپتا کی پیدائش اور اس کی پرورش سے متعلق اپنے جدوجہد کو بیان کیا ہے ۔

نینا گپتا نے حال ہی میں ممبئی مرر کو دئے ایک انٹرویو میں اپنی ذاتی زندگی کے بارے میں کھل کر بات چیت کی اور کئی انکشافات کئے۔ انہوں نے کہا کہ اگر مجھے اپنی زندگی میں کوئی غلطی سدھارنے کا موقع ملا تو میں کبھی شادی کے بغیر ماں نہیں بننا چاہوں گی انہوں نے مزید کہا کہ ہر بچے کو والدین کی ضرورت ہوتی ہے، مگر میں ہمیشہ مسابہ کے ساتھ ایمانداری سے سب کچھ شیئر کرتی رہی اس لئے ہمارے رشتے پر اس کا کوئی اثر نہیں پڑا، لیکن اس نے بھی جدوجہد کی ہے ۔

نینا گپتا 1980 کے دور میں ویسٹ انڈیز کے کرکٹر ویوین رچرڈز کے ساتھ جنسی تعلقات کی بنا پر خبروں میں رہی تھیں ۔ ویوین رچرڈز کے ساتھ ہی انہوں نے بیٹی مسابہ گتپا کو بھی جنم دیا تھا ۔ نینا اور ویوین نے کبھی شادی نہیں کی۔ نینا نے سنگل مدر کے طور پر اپنی بیٹی کی تنہا ہی پرورش کی۔ آج مسابہ گپتا ایک مشہور فیشن ڈیزائنر ہیں اور فلم انڈسٹری میں ایک بڑا نام ہیں ۔

دوسری طرف 60 سالہ نینا گپتا اب اداکارہ کے طور پر اپنے دوسرے دور سے لطف اٹھا رہی ہیں۔ وہ 2018 میں آئی فلم بدھائی ہو کے لئے بہترین اداکارہ کا فلم فیئر ایوارڈ بھی جیت چکی ہیں۔ اس ایوارڈ پر نینا خود بھی حیران ہیں ۔ وہ کہتی ہیں کہ ذرا سوچئے میری عمر میں وہ ایوارڈ جیتنا، جو کئی مرتبہ جوان اور لیڈنگ اداکارائیں نہیں جیت پاتی ہیں۔ اگر آپ بوڑھے ہیں تو زیادہ سے زیادہ معاون اداکارہ کے زمرہ میں ہی ایوارڈ حاصل کر پاتے ہیں ۔

ان دنوں نینا گپتا، کنگنا رناوت کے ساتھ اپنی آنے والی فلم پنگا کی تشہیر میں مصروف ہیں ۔ اس فلم میں وہ کنگنا رناوت کی ماں کے کردار میں نظر آنے والی ہیں۔ اس کے علاوہ نینا گپتا کے پاس کبیر خان کی 83 اور نکھل اڈوانی کی ایک فلم بھی ہے ۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *