وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے اپنی ہی حکومت کی مخالفت کر دی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

وفاقی وزیر قانون سرعام پھانسی کے فیصلے پر اپنی حکومت کی مخالفت پر اتر آئے۔ انہوں نے کہا ہے کہ سرعام پھانسی اسلامی تعلیمات اورآئین کے منافی ہے۔

رپورٹس کے مطابق قومی اسمبلی سے بچوں سے زیادتی وقتل کے مجرموں کو سرعام پھانسی کی قرارداد پاس ہونے پر وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا ہے کہ سرعام پھانسی اسلامی تعلیمات اور آئین کے منافی ہے۔ سپریم کورٹ 1994 میں سرعام پھانسی کوغیرآئینی قراردے چکی ہے۔

فروغ نسیم نے کہا کہ سپریم کورٹ کہہ چکی ہے سرعام پھانسی آئین کے علاوہ شریعت کی بھی خلاف ورزی ہے۔ وزارت قانون آئین وشریعت کے خلاف کوئی قانون نہیں بنائے گی۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *