فلپائن میں ساحل سمندر پر سرعام جنسی حرکات کرنے والا برطانوی جوڑا گرفتاری کے بعد بھی باز نہیں آیا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

فلپائن کے مصروف ترین فیملی ساحل سمندر پر نوجوان جوڑے کو دن دیہاڑے سرعام جنسی حرکات کرنے پر گرفتار کر لیا گیا تاہم بعد ازاں انہیں ضمانت پر رہا کر دیا گیا ۔ تفصیلات کے مطابق فلپائن کے صوبے ” اکلان “ کے معروف ساحل سمندر ” بورا کے“ پر برطانوی لڑکی اور آسٹریلیا کے باشندے نے دن دیہاڑے لوگوں کے سامنے ہی جنسی فعل شروع کر دیا ۔ جیسمین نیلی اور اینتھونی ایک دوسرے میں اتنے زیادہ مشغول تھے کہ انہیں خبر ہی نہ ہوئی کہ پولیس ان کے سر پر آن کھڑی ہوئی ہے۔ اہلکاروں نے انہیں فوری طور پر رکنے کیلئے کہا لیکن جوڑے نے ان کی بات نہ سنی اور اسی طرح مصروف رہے ۔

پولیس نے بتایا کہ 26 سالہ جوڑا شراب کے نشے میں دھت تھا۔ انہیں گرفتار کر لیا گیا اور ہاتھوں میں ہتھکڑی لگا کر گاڑی میں بٹھا دیا گیا لیکن وہ پھر بھی باز نہیں آئے اور گاڑی میں بھی ایک دوسرے کے ساتھ مشغول رہے۔

ڈیلی میل نے پولیس کارپورل کے حوالے سے بتایا کہ پولیس اہلکار جب بیچ پر ان کے پاس جا کھڑے ہوئے تو انہوں نے بالکل توجہ نہیں دی اور اپنے آپ مین مگن رہے۔ انہیں بالکل اندازہ نہیں ہوا کہ لوگ انہیں دیکھ رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ وہ دونوں ایک دوسرے میں اتنا زیادہ ڈوبے ہوئے تھے کہ انہیں اردگر د کی خبر ہی نہ تھی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں فروری میں عدالت کے سامنے پیش ہونا ہو گا اور وہ اگر ایسا نہیں کرتے تو انہیں فلپائن میں سفری پابندیوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

https://www.dailymail.co.uk/news/article-7960295/British-woman-Australian-man-refuse-stop-having-SEX-Philippines-beach.html

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *