آج عاصمہ جہانگیر کی دوسری برسی ہے

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

معروف قانون دان اور انسانی حقوق کی علم بردار عاصمہ جہانگیر کی دوسری برسی آج منائی جا رہی ہے۔ عاصمہ جہانگیر نے پاکستان میں 50 برس تک انسانی حقوق، جمہوریت اور روشن خیالی کے لئے بے مثال جد و جہد کی۔

عاصمہ جہانگیر 27 جنوری 1952 کو لاہور میں انسانی حقوق کے علمبردار ملک جیلانی کے گھر پیدا ہوئیں۔ انہوں نے کنیئرڈ کالج سے بی اے اور پنجاب یونیورسٹی سے ایل ایل بی کیا۔ وہ کالج دور میں ہی یحییٰ خان کی آمریت کے خلاف میدان میں آ گئیں۔ عاصمہ جہانگیر ضیاء الحق اور پرویز مشرف کی آمریت کے خلاف بھی سینہ سپر ہوئیں۔ عدلیہ بحالی تحریک میں پیش پیش رہیں۔ انہوں نے معاشرے میں خواتین اور اقلیتوں کے حقوق کیلئے بہادرانہ جد وجہد کی۔ ان کی مساعی کے نتیجے میں جبری مشقت پر مجبور سینکڑوں محنت کشوں کو حبس بے جا سے رہائی ملی۔

انسانی حقوق کمیشن کی سابق سربراہ عاصمہ جہانگیر پاکستانی سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کی صدر منتخب ہونے والی پہلی خاتون وکیل بھی تھیں۔

عاصمہ جہانگیر 11 فروری 2018 کو دماغ کی شریان پھٹنے سے اچانک دنیا سے رخصت ہوگئیں، بعد از مرگ انہیں ستارہ امتیاز سے نوازا گیا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *