لاہورپولیس کے ہاتھوں گرفتاری کے بعد مولوی یوسف قصوری نے کورونا وائرس سے متعلق شرعی بیان بدل لیا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور پولیس نے حافظ یوسف قصوری کو سوشل میڈیا پر کورونا وائرس سے متعلق دیے گئے بیان کو بدلنے پر راضی کر لیا ہے۔ پولیس کی کارروائی کے بعد حافظ یوسف قصوری نے کورونا وائرس کے خلاف حکومتی اقدامات کی حمایت کردی، انہوں نے اپنے نئے ویڈیو بیان میں حکومتی اقدامات کو درست اور اسلامی اصولوں کے عین مطابق قرار دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مولوی حافظ یوسف قصوری نے جمعے کے خطبے میں لوگوں کو حکومتی اقدامات کو مسترد کرنے کی تلقین کی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ کورونا وائرس کے باعث مساجد پر آنے کیلئے حکومتی اقدامات اور پابندی پر عمل نہ کیا جائے، بلکہ سب لوگ ایک دوسرے سے ہاتھ ملا کر سلام کرکے جائیں اور نماز میں بھی کندھے سے کندھا ملا کر اور ٹخنے سے ٹخنہ ملا کر نماز پڑھیں۔

تاہم پولیس نے مولوی یوسف کو پکڑ لیا تھا۔ تفصیلات کے مطابق لاہور پولیس نے حافظ یوسف قصوری کے خلاف کارروائی کر کے انہیں کورونا کے حوالے سے بیان بدلنے پر راضی کر لیا ہے۔ جس کے بعد حافظ محمد یوسف نے حکومتی اقدامات کی حمایت میں نیا ویڈیو بیان جاری کردیا ہے۔ یہ بیان لاہور پولیس کے ڈی آئی جی آپریشنز ایس پی بلال ظفر اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے سوشل میڈیا کے فوکل پرسن اظہر ماشوانی کے ٹویٹر اکاؤنٹس میں دیکھا جا سکتا ہے۔

جس میں حافظ یوسف قصوری کو ایک بیان پڑھتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ یوسف قصوری نے کہا کہ حکومت کے بتائے گئے حفاظتی اقدامات کی حمایت کرتا ہوں۔ کورونا پھیلاؤ کے حوالے سے حکومتی اقدامات کو درست اور اسلامی اصولوں کے عین مطابق ہیں۔ دوسری جانب متحدہ علماء بورڈ حکومت پنجاب نے بھی کورونا وائرس کی وباء کی وجہ سے حکومت کی ہدایات کے مطابق عوام سے شب معراج کے موقع پر انفرادی عبادات کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کی طرف سے ہر قسم کے سیاسی و مذہبی اجتماعات پر پابندی کے پیش نظر انفرادی عبادات پر توجہ دی جائے اور اجتماعات سے اجتناب کیا جائے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *