مساجد میں با جماعت نماز جاری رہے گی: مفتی منیب اور دیگر مذہبی پیشواؤں کا اعلان

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

پاکستان کے مسلمان علمائے کرام نے مساجد میں باجماعت نماز جاری رکھنے کا اعلان کردیا۔ گورنر ہاوس سندھ میں علمائے  کرام کی مشترکہ ہنگامی پریس کانفرنس ہوئی جس میں مفتی تقی عثمانی  علامہ شہنشاہ نقوی اور مفتی منیب الرحمن شامل تھے ۔

اس موقع پر مفتی منیب الرحمان نے کہا کہ وبائیں ہماری اصلاح کے لیے ہیں۔ اس موقع پر قوم توبہ کرے اور میڈ یا سے فحاشی اور بے حیائی کے پروگرام بند کر دیے جائیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پنج وقتہ اذان اور باجماعت نماز جاری رہے گی۔ تمام لوگ وضو گھر سے کر کے آئیں اور ہر قدم پر اللہ کی طرف سے نیکیاں پائیں، سنتیں گھر پر پڑھیں۔ بعد کی سنتیں اور نوافل بھی گھر پر پڑھیں کیونکہ طبی طور پر بیماری کا اندیشہ ہے۔ اگر طبی بنیاد پر حکومت مساجد میں نماز پر پابندی لگائے یا کسی عمر کے شخص کو روکے تو شرعی طور پر وہ معزول سمجھے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ جماعت اپنے گھروالوں، کسی ایک محرم خاتون کے ساتھ بھی ہو سکتی ہے۔ پچاس سال سے زائد عمر کے لو گ وبا کے پورے دور میں مساجد نہ آئیں۔ نوجوان بزرگوں کی تیمار داری میں مصروف ہیں وہ بھی نماز گھروں پر پڑھیں۔ مسجدوں پر قالین ہٹا کر صفائی کا خیال رکھیا اور دروازوں پر سینی ٹائزر لگائیں۔ جمعہ کے خطبے میں کرونا وائرس سے متعلق آگاہی دی جائے ۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *