”لوگ در لوگ“ اور فرخ سہیل گوئندی کی جہاں گردی

فرخ سہیل گوئندی کی کتاب ”لوگ در لوگ“ اپنے موضوعاتی تنوع کے باعث جہاں قاری کو نگر نگر کی سیر کراتی اور منفرد عالمی شخصیات سے براہ ِراست ملاتی ہے وہاں یہ مسئلہ بھی پیدا کرتی ہے کہ اسے لائبریری میں رکھتے وقت کس شعبہء علم کے خانے میں سجایا جائے۔ اس جمالیاتی مسئلے کی…

Read more

ریاست ہوگی ماں کے جیسی؟

بانی پاکستان اور تحریک آزادی کے ہزاروں لاکھوں کارکنوں کا بنیادی مقصد مسلمانوں کے لئے ایک ایسی الگ ریاست حاصل کرنا تھا کہ جہاں کے باسی اپنی امنگوں کے مطابق زندگی گزار سکیں۔ ہر شہری اپنے فرائض کی ادائیگی کے ساتھ ساتھ اپنے حقوق سے بھی مستفید ہو سکے۔ ہم ایک ایسا خطہؑ ارضی تو حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے کہ جہاں حکومت تو ہمارے لوگ ہی کرتے ہیں پر یہاں کہ عام شہری آج تک ویسی ہی گھٹن کی زندگی جی رہے ہیں جیسے ان کے بزرگ برطانوی راج میں جی رہے تھے اور یہ رویہ لوگوں کے لئے زیادہ تکلیف دہ ہوتا ہے کہ جب ان کے اپنے لوگ ان پر ظلم کرتے ہیں۔

Read more