مسز ابلیس کی ٹینشن

سحری کو سرخ رو کر کے ابھی سویا ہی تھا کہ اچانک دروازے پر دستک ہوئی۔ ٹھک۔ ٹھک۔ ٹھک۔ دروازہ بجتا ہی چلا گیا۔ جوتے پہنے بغیر سر پر پاوں رکھ کر بھاگا۔ دروازہ کھولا۔ دیکھتا کیا ہوں۔ ایک نہایت دراز قد مگر ہیبت ناک قسم کی خاتون دروازے پر ایک عجیب الخلقت قسم کے بچے کے ہمراہ کھڑی ہیں۔ تعارف کراتے ہوئے بولیں۔ میں مسز ابلیس ہوں۔ یہ میرا بیٹا عزازیل ہے۔ میں نے اس شیطانی بچونگڑے کی طرف دیکھا۔ لمبی لمبی چوٹیاں۔ چہرے سے حماقت کی حد تک ٹپکتی ہوئی معصومیت۔

Read more

بارے کاروں کا کچھ بیاں ہوجائے

ایف ایکس کو دیکھو تو اس کی معصوم صورت میں ایک جہاں دیدہ عمر رسیدہ مگر قناعت پسند بزرگ خاتون نظر آتی ہے جو ہانپتی کانپتی اور کھانستی کھونستی رہتی ہے مگر دھن کی اتنی پکی کہ گھٹنے رگڑتی اپنی منزل تک تو پہنچ جاتی ہے لیکن اپنے ”شریک سفر“ کو بھی سفر حیات میں اپنی بھرپور اور تھکاوٹ سے چور رفاقت کا پورا پورا احساس دلاتی ہے۔کرولا ایکس ایل آئی یا ٹو ڈی کو دیکھیں یا ہنڈا سٹی کو تو لمبی زلفوں اور خوبصورت لباس والی کسی دراز قد اور نہایت سوبر مشرقی خاتون کا نقشہ ذہن میں ابھرتا ہے جو مہنگے زیورات (پٹرول کی کھپت) کی بھی شوقین ہے۔

Read more