”ہیولا“ کا افسانہ نگار

”اِک چپ، سو دکھ“ کے افسانوں کو پڑھ کر پہلی خوشی یہ ملی کہ سردرد نہیں ہوا۔ اردو کے کچھ نہایت جدیدیئے افسانہ نگاروں کا یہ چلن عام ہے کہ وہ حتی المقدور کوشش کرتے ہیں کہ قاری کو افسانہ سمجھ نہ آئے، اُس کے دماغ کا دہی بن جائے، وہ سر پر اپنی اماں…

Read more

اورحان پاموک، ناول برف اور آمریت

(درج ذیل گفتگو انجیل گرآقنتانا کے کیے گئے دِپیرس ریویو (سرما2005) کے لئے طویل انٹرویو کے متن سےلی گئی ہے، اس گفتگو میں ترکی کے نوبیل انعام یافتہ ناول نگار اوحان پاموک نے اپنے شہرہ آفاق سیاسی ناول ’برف ’ کے متعلق بتایا ہے کہ اس ناول کو کس جذبے کے ساتھ لکھا گیا اور…

Read more

حفیظ تبسم کے دشمنانِ منظومہ کا مختصر جائزہ

میرے پسندیدہ ادیب گیبریئل گارسیا مارکیز نے ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ نوبیل انعام کے حصول کے بعد جب ان کی شہرت کو پر لگ گئے تو ان کے لئے نئے دوستوں کی تعداد گننا ناممکن ہوگیا، مارکیز کے مطابق جہاں کچھ افراد منافقانہ خوشامد کے ساتھ ان کی شہرت سے اپنا حصہ لینے…

Read more