مرد ظالم ہے !

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

\"nosheenمدیحہ سسرال میں بالکل خوش نہیں ۔ہر وقت کوئی نہ کوئی پریشانی اور مشکل سر پرآکھڑی ہو تی ہے ۔آخر صبر اور برداشت کی بھی کوئی حد ہوتی ہے۔ آئے دن نندیں گھر بیٹھی رہتی ہیںاوربھابھی کو تو وہ نوکر سمجھتی ہیں۔
ساس بھی کچھ کم نہیںہیں۔ان کے ہر وقت کے طعنے اس کے دماغ کی رگیں پھاڑنے لگتے ہیں۔
اور جیٹھانی نے تو زندگی عذاب کر دی ہے،ایسا محسوس ہوتاہے کہ گھر پر صرف اسی کا حق ہے۔ بھلایہ بھی کوئی زندگی ہے۔ مگر کیاکریں میکہ بھی تو اپنا نہیں رہا۔ وہاں بھی بھابھی آگئی ہیں۔وہ بھی تو اس کی موجودگی برداشت نہیں کرتیں۔

سچ ہی کہتے ہیں سب ”مرد بہت ظالم ہے، یہ صرف مردوں کا ہی معاشرہ ہے“

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •