فردوس عاشق کا رانا ثنا اللہ کو دو ارب روپے ہرجانے کا نوٹس

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

معاون خصوصی اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے ن لیگی رہنما رانا ثناء اللہ کو 2 ارب روپے ہرجانے کا نوٹس دیا ہے۔ لیگل نوٹس 26 مئی کوفردوس عاشق اعوان کے بارے میں بیانات پر بجھوایا گیا ہے۔ معاون خصوصی اطلاعات کے وکلاء کا کہنا ہے کہ رانا ثنا اللہ نے ہماری موکلہ پر بے بنیاد اور جھوٹے الزامات لگائے۔

نوٹس میں کہا گیا ہے کہ فردوس عاشق اعوان دنیا بھر میں ایک قابل اور ایماندار سیاستدان کے طورپر جانی جاتی ہیں۔ وہ 10 سال تک قومی اسمبلی اور پانچ مختلف وزارتوں میں وزیر رہی ہیں اور اس وقت بھی بطورمعاون خصوصی اطلاعات اہم ذمہ داریاں نبھا رہی ہیں۔

نوٹس کے متن میں کہا گیا ہے کہ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کی تقریباً 20 سالہ عوامی خدمات ہیں۔ وہ ایک انتہائی معزز گھرانے سے تعلق رکھتی ہیں۔ جھوٹے الزامات سے ہماری موکلہ کی دل آزاری، شہرت کونقصان اور ساکھ مجروح ہوئی۔

نوٹس میں مزید کہا گیا ہے کہ رانا ثناء اللہ الزامات کی تردید کریں، معافی مانگیں اور 2 ارب روپے ہرجانہ بھی ادا کریں۔

نوٹس میں کہا گیا ہے کہ جھوٹی خبر پر معافی، اس کی تردید اور ہرجانہ 14 دن کے اندر ادا کیا جائے، دونوں اقدام نہ کیے گئے تو قانونی چارہ جوئی کا حق رکھتے ہیں۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •