خواتین کی جنسی خواہش کو بحال کرنے والی دوا “وائی لی سی” کو امریکی حکومت سے منظوری مل گئی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

امریکی خواتین کو بہت جلد ایسی دوا دستیاب ہو جائے گی جس سے ان کی جنسی خواہش میں کمی کا علاج ممکن ہو گا۔ ران یا پیٹ میں اس دوا کا انجکشن لگانے سے کئی گھنٹے کے لئے جنسی خواہش بڑھ جائے گی۔

امریکہ میں فوڈ اینڈ ڈرگ اتھارٹی کی جانب سے جمعہ کے روز منظور کی جانے والی یہ دوا اپنی نوعیت کی صرف دوسری دوا ہے۔ نوے کی دہائی میں مدروں کے لئے ویاگرا نامی دوا منظور کی گئی تھی۔ اس کے بعد سے دوا ساز کمپنیاں عورتوں کے لئے بھی ایسی ہی دوا کی سرکاری منظوری کے لئے کوشاں تھیں۔

 یومیس میموریل میڈیکل سینٹر کی ڈاکٹر جولیا جانسن نے کہا کہ نئی دوا کا اضافی فائدہ یہ ہے کہ آپ اسے صرف تب استعمال کرتے ہیں جب آپ کو اس کی ضرورت محسوس ہو تاہم اس دوا میں ایک پیچیدگی یہ ہے کہ اسے صرف انجکشن کی صورت میں لیا جا سکتا ہے اور بہت سے لوگ انجکشن لگانے سے گھبراتے ہیں۔

دوا تیار کرنے والی کمپنی کو خدشہ ہے کہ ناپسندیدہ ضمنی اثرات اور محدود انشورنس کوریج کے باعث اس دوا کی فوری مقبولیت میں رکاوٹیں پیش آ سکتی ہیں۔ کمپنی نے دوا کی قیمت بتانے سے بھی انکار کیا ہے۔ایف ڈی اے نے جنسی تعلقات میں دلچسپی کی مسلسل کمی کی شکایات پر خواتین کے لئے اس دوا کی منظوری دی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ اس دوا کے ناپسندیدہ ذیلی اثرات میں متلی اور سر درد کی شکایت عام ہے۔

اس دوا کی منظوری سے قبل کی گئی تحقیق سے معلوم ہوا تھا کہ خواتین میں جنسی خواہش میں کمی کے باعث ان پر ذہنی دباؤ بڑھ جاتا ہے۔ دوا ساز کمپنی کی چیف میڈیکل آفیسر ڈاکٹر جولی کپ نے کہا کہ یہ دوا استعمال کرنے کی خواہشمند خواتین کی اکثریت جنسی سرگرمی میں اضافے کی خواہشمند نہیں ہیں بلکہ جنسی سرگرمی کی کوالٹی بہتر بنانا چاہتی ہیں۔

ایف ڈی اے نے کہا یے کہ ہائی بلڈ پریشر یا دل کی بیماری کی حامل یا الکحل کی عادی عورتوں کو یہ دوا نہیں لینی چاہئے کیونکہ انجکشن کے بعد خون کے دباؤ میں اضافہ ہوتا ہے.

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ جنسی خواہشات پر بہت سے عوامل اثر انداز ہوتے ہیں، جن میں گھرہلو تعلقات، دوسرے طبی مسائل اور موڈ کی خرابیاں بھی شامل ہیں. دواسازی کی صنعت نے طویل عرصے تک اس مسئلے پر تحقیق کی ہے – خیال کیا جاتا ہے کہ امریکا میں عورتوں میں جنسی خواہش کی کمی سب سے زیادہ عام بیماری ہے، جس میں ہر 10 خواتین میں سے ایک خاتون متاثر ہوتی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق امریکا میں ساٹھ لاکھ خواتین جنسی خواہش میں کمی کا شکار ہیں۔

ابتدائی نتایج کے مطابق وائی لی سی نامی دوا استعمال کرنے والی خواتین نے ہر ماہ کم از کم ایک مرتبہ اطمینان بخش جنسی سرگرمی کا اعتراف کیا ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •