میں اپنی بیوی کو لڑائی جھگڑے کے سین کی ریہرسل کروا رہا تھا: محسن عباس حیدر کا پولیس کو بیان

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اہلیہ کی جانب سے تشدد کا الزام عائد کیے جانے کے بعد اداکار و گلوکار محسن عباس حیدر نے پولیس کو اپنا بیان ریکارڈ کرا دیا ہے۔

ڈیفنس سی لاہور پولیس کو اپنا بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے محسن عباس حیدر نے اپنی اہلیہ کی جانب سے عائد کیے جانے والے تشدد کے الزامات کی نفی کی ہے۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ان کے اور ان کی اہلیہ فاطمہ سہیل کے مابین کوئی جھگڑا نہیں ہوا اور نہ ہی انہوں نے کوئی تشدد کیا ہے، نہ ہی میں نے کبھی ایسا کیا ہے اور نہ کبھی ایسا سوچ سکتا ہوں۔

تشدد والی تصاویر کے حوالے سے پولیس کو محسن عباس حیدر نے اپنے بیان میں بتایا کہ یہ تصاویر شوٹنگ کے دوران جھگڑے کے ایک سین کی ہیں اور وہ اپنی اہلیہ کو لڑائی جھگڑے کے سین کی پریکٹس کرا رہے تھے۔

خیال رہے کہ مذاق رات کے ڈی جے محسن عباس حیدر پر ان کی اہلیہ فاطمہ سہیل نے اپنی ایک فیس بک پوسٹ کے ذریعے تشدد کا الزام عائد کیا تھا ۔ فاطمہ کے مطابق ڈی جے نے اسے اس وقت بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا جب وہ حاملہ تھی ۔ فاطمہ نے یہ الزام بھی عائد کیا تھا کہ جب ان کا لاہور میں بیٹا پیدا ہوا تو اس وقت ڈی جے کراچی میں ماڈل گرل نازش جہانگیر کے ساتھ رنگ رلیاں منا رہا تھا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •