ایمپوریم مال کے سینما میں خفیہ طور پر بنائی گئی فحش ویڈیوز کا سکینڈل

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

سوشل میڈیا پر بعض ویڈیو وائرل ہو رہی ہیں جو نائٹ ویژن کیمروں کی مدد سے بنائی گئی ہیں۔ سوشل میڈیا پر بتایا جا رہا ہے کہ یہ ویڈیوز ایمپوریم مال جوہر ٹاؤن لاہور میں واقع سینما کی ہیں۔ ان میں نوجوان جوڑوں کو غیر اخلاقی حرکات کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

ان جوڑوں کے چہرے فوکس کیے گئے ہیں اور اس کے نتیجے میں ان کی جان خطرے میں پڑ سکتی ہے۔ بظاہر خفیہ طور پر نصب کردہ نائٹ ویژن کیمروں سے بنائی گئی یہ ویڈیوز سینما کے کسی اہلکار نے لیک کی ہیں۔

اہم سوال یہ ہے کہ کیا ان کیمروں کے متعلق کسٹمرز کو مطلع کیا گیا تھا؟ کسی کا قتل ہونے کی صورت میں کیا سینما انتظامیہ کی ذمہ داری نہیں ہو گی؟ اب تک پنجاب حکومت نے اس پر کیا ایکشن لیا ہے؟ کیا سینما کی درست شناخت کر کے تحقیقات مکمل ہونے تک سیل کر کے اس کی انتظامیہ کو گرفتار کیا گیا ہے؟

ان خفیہ ویڈیوز کے انکشاف پر ایک شہری حماد حیدر نے اپنے غصے کا اظہار کرتے ہوئے اس سینما کے مالک سائناپیکس کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ “ہر ویک اینڈ پر میں اپنی فیملی کے ساتھ مووی دیکھنے ایمپوریم مال جاتا ہوں، آج میں نے آپ کی ایمپوریم مال برانچ کی وائرل ویڈیوز دیکھیں۔ میں اب نروس ہوں اور اپنی فیملی کو غیر محفوظ محسوس کر رہا۔ اس کا مطلب ہے کہ ہم آپ کے سینما میں محفوظ نہیں ہیں۔ میں سائناپیکس کا بائیکاٹ کرتا ہوں۔”

بلنڈر وومن نامی صارف نے ٹویٹ کیا کہ شیم آن ایمپوریم سینما جس نے اس عمل کے مرتکب لوگوں ساری سی سی ٹی وی فوٹیج لیک کی۔ اور وہ لوگ بھی شرم کریں جو کسی بھی وجہ سے ایسی ویڈیوز شیئر کر رہے ہیں۔ دونوں ہاتھوں سے لعنت۔

سبطین طاہر نے ٹویٹر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایسی تمام ویڈیوز کو ڈیلیٹ کر دے کیونکہ یہ لڑکیاں قتل کی جا سکتی ہیں۔

image_pdfimage_print
Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •