خفیہ فحش فلموں کا اسکینڈل کھلنے پر لاہور کا ایمپوریم مال نیب کے نشانے پر آ گیا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

خفیہ فحش فلموں کا اسکینڈل سامنے آنے کے بعد نیب نے لاہور میں ایمپوریم مال کے خلاف تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایمپوریم مال کی اراضی کس کی تھی اور اسے نشاط گروپ کو کیسے فروخت کیا گیا؟ بورڈ آف ریونیو نے یہ زمین کب ایل ڈی اے کے حوالے کی؟ ایل ڈی اے نے کن شرائط پر نشاط گروپ کو یہ زمین فروخت کی؟ اس حوالے سے نیب نے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ نیب نے اس ضمن میں بورڈ آف ریونیو کے قانون کے تحت ریکارڈ کا جائزہ لینے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ایمپوریم مال کی اراضی ایل ڈی اے کی ملکیت رہی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب کی تحقیقات میں ایمپوریم مال کی اراضی کی نیلامی کی تفصیلات بھی اکٹھی کی جائیں گی۔

واضح رہے کہ ایمپوریم مال لاہور کے خوبصورت ترین شاپنگ مالز میں سے ایک ہے۔ ایمپوریم مال میں تمام ضروریات زندگی ایک ہی چھت کے نیچے میسر ہیں جس کی وجہ سے شہریوں کی جانب سے اسے خوب پسند کیا جاتا ہے۔ تاہم گزشتہ دنوں ایمپوریم مال کے ایک سنیما میں خفیہ طور پر بنائی گئی فحش فلموں کا اسکینڈل سامنے آیا۔ اس ہنگامے کے نتیجے میں ایمپوریم مال نیب کے نشانے پر آ گیا ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •