سعودی عرب بھارت میں ایک سو ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

دنیا میں تیل کا سب سے بڑا برآمد کنندہ سعودی عرب بھارت میں مختلف شعبوں میں مجموعی طور پر 100 بلین ڈالر (پاکستانی 15 ہزار 682 ارب روپے) کی سرمایہ کاری پر غور کر رہا ہے۔

بھارت میں سعودی عرب کے سفیر ڈاکٹر سعود بن محمد ال ساتی نے کہاہے کہ سعودی عرب کیلئے بھارت سرمایہ کاری کیلئے پرکشش منزل ہے اور وہ نئی دہلی کے ساتھ تیل، گیس، مائننگ کے شعبے میں طویل شرکت داری پر نظریں جمائے ہوئے ہیں۔ سعودی سفیر نے ایک انٹرویو کے دوران بتایا کہ سعودی عرب بھارت میں توانائی، ریفائننگ، پیٹرو کیمیکلز، انفرا اسٹرکچر، زراعت ، معدنیات اور مائننگ کے شعبے میں مجموعی طور پر 100 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری پر غور کر رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کی سب سے بڑی تیل کی کمپنی آرامکو کی ریلائنس انڈسٹریز لیمیٹڈ کے ساتھ مجوزہ شراکت دونوں ممالک کے درمیان توانائی کے شعبے میں تعلقات کی سٹریٹیجک نوعیت کی عکاسی کرتا ہے۔ سفیر نے کہا کہ ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے وژن 2030 کے نتیجے میں مختلف شعبوں میں ہندوستان اور سعودی عرب کے مابین تجارت اور کاروبار میں نمایاں توسیع ہوگی۔ ان کا کہنا تھا کہ 2019 میں بھارت اور سعودی عرب میں مشترکہ تعاون اور سرمایہ کاری کیلئے مختلف شعبوں میں 40 مواقع کی نشاندہی کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اور سعودی عرب کے درمیان موجودہ تجارت 34 ارب ڈالر کی ہے جبکہ وقت کے ساتھ اس میں مزید اضافہ ہو گا۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •