عمرہ زائرین کی چند غلطیاں

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جدہ کی پرواز پر دو طرح کے لوگ سفر کرتے ہیں۔ ایک وہ جو کہ زائرین ہوتے ہیں اور دوسرے وہ جو وہاں پر نوکری کرتے ہیں اور ان کے پاس اقامہ ہوتا ہے۔ جہاز رکنے کے بعد اکثر اقامہ کے حامل افراد کو جہاز سے پہلے اتارا جاتا ہے اور اس کے بعد زائرین کی باری آتی ہے۔ ایک بابا جی کو دیکھا جو کہ زائرین کی قطار میں شامل تھے لیکن انہوں نے احرام نہیں باندھا ہوا تھا حالانکہ جب جہاز میقات کے مقام سے گزرتا ہے تو دو مرتبہ اعلان کیا جاتا ہے۔

ایک مرتبہ آدھے گھنٹے پہلے اور دوسری مرتبہ پانچ منٹ پہلے۔ میں نے احتیاطاً پوچھا کہ کہیں وہ اقامہ والے افراد میں شامل نہ ہوں لیکن وہ عمرہ کرنے ہی آئے تھے۔ میں نے ان کو الگ لے جا کر سمجھایا کہ یہ ایک مسئلہ ہے اور کسی عالم سے پوچھنا بہتر رہے گا کہ اب آپ کو کیا کرنا چاہیے۔ میں ان کو الگ سائیڈ پر اس لئے لے گیا کہ مسلمانوں کی مچلتی مسکراہٹیں ان کا تمسخر اڑانے کو تیار تھیں۔ ایسے موقع پر ہر کوئی عالم بن جاتا ہے چونکہ اسلام خطرے میں پڑ جاتا ہے۔

ایک گزشتہ تحریر میں بھی عرض کر چکا ہوں کہ عمرہ زائرین کے لئے بھی معلوماتی پروگرام تشکیل دینے چاہئیں جن میں ان کو عمرہ کی ادائیگی کے بارے میں مکمل معلومات فراہم کی جا سکیں۔ آج کل تو تھری ڈی پریزنٹیشنز کا زمانہ ہے ایک معلوماتی پریزنٹیشن بنا دینا کون سی مشکل بات ہے۔ اگر حکومت کی طرف سے پاکستان کی ہر زبان میں ڈب کر کے ایک معلوماتی ویڈیو بنا کر وائرل کردی جائے تو کتنا اچھا ہو۔ جس طرح قصیدہ بردہ شریف آج کل ہر زبان میں زبان زد عام ہے اسی طرح پنجابی سرائیکی پوٹھوہاری بروہی اور پشتو میں ایک ویڈیو بنا کر کیوں نہ لوگوں کے لئے آسانی پیدا کر دی جائے۔

نییتیں خدا ہی جانتا ہے۔ بہت لوگوں کے لیے وی آئی پی عمرہ کرنا کوئی بڑی بات نہیں ہوگی۔ لیکن کچھ لوگ واقعی ایسے ہوتے ہیں جو ساری عمر پیسہ جوڑتے ہیں اللہ کے گھر جانے کے لیے۔ لہذا اگر کوئی یہ آئیڈیا ارباب اختیار تک پہنچا دے تو میں بہت شکر گزار ہوں گا۔ اور اگر کوئی رضاکارانہ طور پر اس آئیڈیا پر عمل کرنا چاہے تو بسم اللہ۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

خاور جمال

خاور جمال پیشے کے اعتبار سے فضائی میزبان ہیں اور اپنی ائیر لائن کے بارے میں کسی سے بات کرنا پسند نہیں کرتے، کوئی بات کرے تو لڑنے بھڑنے پر تیار ہو جاتے ہیں

khawar-jamal has 25 posts and counting.See all posts by khawar-jamal

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *