نون لیگی سینیٹر کہتے ہیں ہمارا شیر تو لمبا لیٹ گیا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

سینیٹ کا اجلاس تین بجے شروع ہونا تھا پون تین بجے میں سینٹ پہنچ گیا ٹھیک تین بجے تلاوت کلام پاک سے سینیٹ کا اجلاس شروع ہوا تلاوت کے بعد جو ترجمہ کیا گیا وہ یہ تھا کہ ”حقیقت یہ کہ تمام مسلمان بھائی بھائی ہیں اس لیے اپنے دو بھائیوں کے درمیان تعلقات بہتر بناؤ کوئی مرد دوسرے مردوں اور عورتیں دوسری عورتوں کو بُرا بھلا نہ کہیں ہو سکتا ہے کہ جن کو بُرا بھلا کہا جا رہا ہے وہ اُن سے بہتر ہوں“

اجلاس شروع ہونے سے قبل ایم کیو ایم کے سئینٹر عتیق الرحمن ن لیگ کے سینیٹر مشاہداللہ خان کہہ رہے تھے کہ آپ کو شیر وہ چاہیے جو شیرنی بھی ساتھ لائے اس پر مشاہد اللہ خان نے جواب دیا ”ہمارا شیر تو لمبا لیٹ گیا اُسے معجون کھلانے کی ضرورت ہے“

وزیر دفاع پرویز خٹک نے آرمی ایکٹ ترمیمی بل سینٹ میں پیش کیا بل کی منظوری کے دوران جماعت اسلامی سے تعلق رکھنے والے سینٹر مشتاق نے سینٹ چیئرمین کے سامنے دھرنا دیا اُن کے ساتھ میر حاصل خان بزنجو، عثمان کاکڑ، میر کبیر ہمدانی اور جمعیت علماء اسلام کے سینٹر تھے۔

پی پی کی سینٹر شیری رحمان نے بولنا شروع کیا تو سینٹ چیرمین صادق سنجرانی نے یہ کہہ کر چُپ کروا دیا کہ سینٹر صاحبہ کمیٹی سے بل پاس کروانے میں آپ پیش پیش تھیں اس کے بعد شیری رحمان خاموشی سے بیٹھ گئی۔

سینٹر عثمان کاکڑ نے دوران اجلاس بلند آواز میں کہا کہ جمہوریت بوٹ تلے کچلی گئی ن لیگ اور پیپلزپارٹی کی لیڈر شپ نے اپنے لوگوں کے ساتھ ظلم کیا تاریخ انھیں معاف نہیں کرے گی۔

آرمی ایکٹ بل پاس ہونے پر حکومتی بنچوں سمیت اپوزیشن نے بھی تالیاں بجائی۔ بیس منٹ کی مختصر ترین کارروائی میں آرمی ایکٹ بل پاس ہونے کے بعد اجلاس ملتوی کر دیا گیا۔

نوٹ! اپوزیشن سے تعلق رکھنے والے نو عدد سینٹر جب اجلاس کی کارروائی کے دوران ”نو نو“ کے نعرے لگا رہے تھے تو مجھے وہ ہد ہد یاد آ گیا جو اپنی چونچ میں پانی لے کر نار ابراہیم پر پھینک رہا تھا اُسے پتہ تھا کہ اس پانی سے آگ کے الاؤ پر کوئی فرق نہیں پڑے گا مگر وہ اپنے حصے کا کام کر رہا تھا

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بشارت راجہ

بشارت راجہ رفاہ یونیورسٹی سے میڈیا سائسز میں ایم فل کر رہے ہیں۔ اسلام آباد سے آن لائن نیوز ایجنسی کے ساتھ بطور کورٹ رپورٹننگ کر رہے ہیں۔ مختلف ویب سائٹس کے لیے بلاگ اور کالم بھی لکھتے ہیں۔

bisharat-siddiqui has 99 posts and counting.See all posts by bisharat-siddiqui

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *