امریکی ریاست یوٹاہ: ’ذومعنی جملوں‘ کے استعمال پر مفت کنڈومز کی تقسیم بند

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

امریکہ کی ریاست یوٹاہ کے گورنر گیری ہربرٹ نے ایک لاکھ کنڈومز کی مفت تقسیم کو روک دیا ہے۔ یہ فیصلہ پیکجنگ پر موجود جنسی طور پر ذومعنی جملوں کی وجہ سے کیا گیا ہے۔

اس میں یوٹاہ اور اس کے دارالحکومت سالٹ لیک سٹی کے مخففین کو SL,UT کی ترتیب سے لکھا گیا ہے جبکہ ’یوٹاہ کے غاروں میں گھومیں‘ بھی ایک پیکٹ پر تحریر ہے۔

https://twitter.com/Q13FOX/status/1217915804236353536

یہ یوٹاہ کے محکمہ صحت کی جانب سے ایچ آئی وی کے انسداد اور محفوظ سیکس کے فروغ کی مہم کے لیے تیار کیے گئے تھے۔

مگر اب محکمے نے اس ’اشتعال انگیز پیکجنگ‘ پر معذرت کر لی ہے۔

ریپبلیکن پارٹی سے تعلق رکھنے والے گیری ہربرٹ کے دفتر سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ وہ ’یوٹاہ کے محکمہ صحت کی جانب سے ریاست کے رہنے والوں کو ایچ آئی وی کے بارے میں آگاہ کرنے کی اہمیت سے واقف ہیں۔‘

’مگر وہ ٹیکس دہندگان کے پیسوں سے شروع ہونے والی مہم میں جنسی اشاروں کی حمایت نہیں کرتے، اور ہمارے دفتر نے محکمے سے کہا ہے کہ وہ مہم کی برانڈنگ دوبارہ کریں۔‘

https://twitter.com/UtahDepOfHealth/status/1217661809764626433

اس کے جواب میں محکمہ صحت نے ٹویٹ کیا کہ ’ڈیزائنز کی منظوری کے لیے ضروری مراحل پورے نہیں کیے گئے تھے‘ اور انھوں نے اس مہم میں شامل سب تنظیموں پر زور دیا کہ وہ فوراً ان کنڈومز کی تقسیم روک دیں۔

محکمے نے اس بات پر بھی زور دیا کہ وہ ’ایچ آئی وی کے انسداد کی مہم چلانے کے لیے‘ اب بھی پرعزم ہیں اور وہ یہ کام ’ایسے انداز میں کرنا چاہتے ہیں جو ٹیکس دہندگان کی رقوم کی عزت کرتا ہو۔‘

محکمے نے ان کنڈومز کو امریکہ کی اس مغربی ریاست میں کئی طبی مراکز کے ذریعے تقسیم کرنے کا منصوبہ بنایا تھا۔

ایچ آئی وی ایسا وائرس ہے جو انفیکشن کے شکار فرد کا مدافعتی نظام آہستہ آہستہ ختم کر دیتا ہے۔ اس کی علامات میں کمی کے لیے دوائیں موجود ہیں مگر اب تک اس کا کوئی علاج نہیں ہے۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 12385 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp