گوجرانوالہ میں سات سالہ بچے کو مذہبی مدرسے میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والا ملزم گرفتار

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

گوجرانوالہ پولیس نے کمسن بچے کو مذہبی مدرسے میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے ملزم کو گرفتار کرلیا، ملزم نے7 سالہ فیضان کو مدرسے میں لےجا کر مبینہ زیادتی کا نشانہ بنایا، ملزم مجید کالونی کا رہائشی ہے۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق گوجرانوالہ کا رہائشی 7 سالہ بچہ نماز ظہر پڑھنے مسجد گیا۔ جب بچے کو کافی دیر ہوگئی اور وہ گھر واپس نہ آیا۔ تو والدین کو تشویش ہونے لگی۔ جب والدین بچے کی تلاش میں مسجد گئے تو ان کو اپنے بچے کی مسجد سے ملحقہ مدرسے میں رونے چیخنے کی آواز آئی۔ جب والدین وہاں پہنچے تو بچے کی شلوار اتری ہوئی تھی اور وحشی درندہ بچے کو درندگی کا نشانہ بنا رہا تھا۔ ملزم بچے کے والدین کو دیکھتے ہی فوری موقع سے فرار ہوگیا۔

ویڈیو تصاویر میں بھی دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک نوجوان کمسن بچے کو لے کر جا رہا ہے اور بچے کی مزاحمت کے باوجود زبردستی زیادتی کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ تاہم گوجرانوالہ پولیس نے مجید کالونی میں ملزم سجاول کو گرفتار کرلیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے 7سالہ فیضان کو مدرسے میں لے جاکر مبینہ زیادتی کا نشانہ بنایا۔ پولیس نے معاملے کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی حاصل کرلی ہے۔ جس میں ملزم کو کمسن بچے کو اپنے ساتھ لے جاتے دیکھا جا سکتا ہے۔ ملزم واقعے کے بعد فرار ہوگیا تھا لیکن پولیس نے بروقت کارروائی کرکے گرفتار کرلیا ہے۔ پولیس ملزم سے واقعے سے متعلق انکوائری شروع کردی ہے۔ چیئرپرسن چائلڈپروٹیکشن بیورو لاہور نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے کارروائی کی ہدایت کی تھی۔

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *