#WhenCoronaVirusIsOver: کورونا کی وبا ختم ہونے کے بعد لوگ اپنے کون کون سے شوق پورے کریں گے؟

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جاپان

AFP

اس میں کوئی شک نہیں کہ کورونا وائرس کی وجہ سے دینا بھر میں مایوسی اور خوف کا عالم ہے۔ وائرس سے مزید ہلاکتوں کا خدشہ ہے اور لوگوں اپنے گھروں تک محدود ہو کر رہ گئے ہیں لیکن ایسے وقت میں بھی بہت سے افراد نے اپنی ہمت بڑھانے اور امید کا دامن نہ چھوڑنے کی ٹھان رکھی ہے۔

ٹوئٹر پر ہیش ٹیگ #Whenvoronavirusisover یعنی ‘جب کورونا وائرس ختم ہو گا’ ٹرینڈ کر رہا ہے، جس کے ذریعے صارفین یہ بتا رہے ہیں کہ اس وبا کے خاتمے کے بعد وہ اپنی کون کون سی حسرتیں پوری کریں گے۔

یہ ٹرینڈ یقیناً لوگوں کی توجہ خوش آئند چیزوں اور روشن مستقبل کی جانب مبذول کرواتے ہوئے یہ شعور اجاگر کرتا ہے کہ زندگی کتنی قابل قدر چیز ہے۔

یہ بھی پڑھیے

وائرس کے خوف میں زندگی، ووہان کی لڑکی کی ڈائری

آخر کورونا وائرس شروع کہاں سے ہوا؟

کورونا وائرس: اچھی خبر یہ ہے کہ۔۔۔

کائلی ریورڈن نامی ایک صارف نے لکھا کہ جب کورونا وائرس ختم ہو گا تو ہم سب کو یہ احساس ہو گا کہ یہ ہمیشہ سے صرف محبت کا معاملہ تھا۔

کائلی نے لکھا کہ ہمیں احساس ہو گا کہ لباس، گھر یا آپ کی شکل و صورت معنی نہیں رکھتے۔

ٹیلی وژن کی معروف شحضیت اور ماڈل ایولن لوزاڈا نے بھی اس حوالے سے کہا کہ کورونا وائرس ختم ہونے کے بعد وہ کھانے پینے، سینما جانے، گرجا گھر جانے، کسی بال گیم، کنسرٹ یا دوستوں کے ساتھ گھومنے پھرنے کے بارے میں ایک نئی سطح پر شکر گزار ہوں گی۔

پاکستان میں عوامی ورکرز پارٹی کی کارکن طوبی سید نے کورونا وائرس کے خاتمے کے بعد سب کے لیے مفت طبی سہولیات، معقول آمدن، مفت تعلیم اور گھر کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

سوشل میڈیا پر بہت سے لوگ مختلف تصاویر بھی شئیر کر رہے ہیں، جن میں انھیں کورونا وائرس کی وبا سے قبل اپنے دوستوں کے ساتھ وقت گزارتے دیکھا جا سکتا ہے۔

ارم علی نامی ایک صارف نے ٹوئٹر پر ایک تصویر شئیر کی جس میں انھیں اپنی دوست کے ہمراہ ساحل سمندر پر بیٹھے دیکھا جا سکتا ہے۔

https://twitter.com/IrrumAli/status/1244382658446209024

ماضی کی یہ تصویر کا حوالہ دیتے ہوئے انھوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ حالات بہتر ہوئے تو وہ اپنی دوست کے ساتھ کسی معروف سیاحتی مقام پر جائیں گی۔

پیار محبت کے پیغامات جہاں گردش کرتے دکھائی دیے وہیں نانا کویکو نامی صارف نے کہا کہ انھوں نے فیصلہ کرلیا ہے کہ کورونا وائرس ختم ہونے کے بعد وہ شادی کریں گے۔

ایک اور صارف نے لکھا کہ وہ اپنی فیملی کو چھٹیوں پر لے کر جائیں گے۔

آصف اندریاس نامی ایک صارف نے اپنی ٹویٹ کے ذریعے یہ عہد کیا ہے کہ کورونا وائرس ختم ہونے کے بعد وہ ماحولیات کے تحفظ کے لیے اپنا کردار ادا کریں گے۔

https://twitter.com/asifInderyas/status/1244495523723251712

سوشل میڈیا پر صارفین ایک دوسرے کو یہ مشورہ دیتے ہوئے بھی دکھائی دیے کہ صفائی کے اصولوں پر عمل کرنے جیسی عادات کو کورونا وائرس ختم ہونے کے بعد بھی مضبوطی سے تھام لیں۔

ڈینیئل ایبراہم نامی صارف نے ہاتھ باقائدگی سے دھونے کو طرز زندگی کا مستقل حصہ بنانے کی تاکید کی۔

ریستوران بند ہیں اور سیاحتی مقامات ویران پڑے ہیں، ایسے میں کھانے پینے کے شوقین افراد نے کورونا وائرس کے خاتمے کے بعد اپنا من پسند کھانا کھانے کے خواھش کا اظہار بھی کیا ہے۔

نیرج نامی صارف نے کہا کہ کورونا ختم ہونے کے بعد وہ پانی پوری سے لطف اندوز ہوں گے۔


  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Facebook Comments - Accept Cookies to Enable FB Comments (See Footer).

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 21754 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp