اہل بیت اور تحفظ بنیاد اسلام بل: چودھری پرویز الٰہی کے رابطے

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور (اکرام راجہ): 26 جولائی 2020
سپیکر پنجاب اسمبلی کی جانب سے مندرجہ ذیل موقف ارسال کیا گیا ہے جس میں ان رابطوں کا بتایا گیا ہے جو وہ تحفظ بنیاد اسلام بل پر اعتراضات کو دور کرنے کے لیے کر رہے ہیں۔

سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی کی علامہ ساجد نقوی، مفتی منیب الرحمن، مفتی راغب نعیمی، پیر امین الحسنات شاہ، علامہ ریاض حسین نجفی ہیڈ شیعہ مدارس کونسل، ثاقب رضا مصطفائی، سید سبطین حیدر سبزواری، سید صفدر شاہ، سابق ایم پی اے سید تقلید رضا شاہ آف تلہ گنگ، علامہ گلفام ہاشمی سے تحفظ بنیاد اسلام بل کے متعلق ٹیلیفون پر مشاورت۔

تحفظ بنیاد اسلام بل کے تحت تمام کتب میں خاتم النبین حضرت سیدنا محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم لازمی لکھا جائے گا: چودھری پرویز الٰہی

تمام حضرات اہل بیت اطہار، تمام ازواج مطہرات (امہات المومنین) تمام صاحبزادیوں، صاحبزادوں، تمام نواسوں اور نواسیوں کے لئے علیہ السلام یا سلام اللہ علیھا یا رضی اللہ عنہ یا رضی اللہ عنہا لازمی لکھا جائے گا: چودھری پرویز الٰہی

حضرات اہل بیت اطہار کے ناموس پر ہمارا سب کچھ قربان ہے : چودھری پرویز الٰہی
اہل بیت سے محبت ہمارے ایمان کا حصہ ہے : چودھری پرویز الٰہی

مجھ سمیت تمام اسمبلی نے پاکستان کی تاریخ میں سب سے پہلے متفقہ طور پر وہ کتب ضبط کرنے کا حکم دیا جس میں حضرت علی کرم اللہ وجہ الکریم سمیت اہل بیت اطہار کی شان میں گستاخی کی گئی تھی: چودھری پرویز الٰہی

یہ ہمارے اہل بیت اطہار سے عشق کا عملی ثبوت ہے : چودھری پرویز الٰہی
ہم اہل بیت اطہار اور تمام صحابہ کے غلام ہیں : چودھری پرویز الٰہی

ہمارے یا ہماری نسلوں کے ہوتے ہوئے خاتم النبیین حضرت محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم، تمام خلفائے راشدین، امہات المومنین، اہل بیت اطہار اور اصحاب رسول رضوان اللہ تعالیٰ علیہم اجمعین کی شان میں گستاخی نہیں ہو سکتی: چودھری پرویز الٰہی
تحفظ بنیاد اسلام بل سے تمام مسالک کے درمیان اتحاد و پیار مزید مضبوط ہوگا: چودھری پرویز الٰہی

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

One thought on “اہل بیت اور تحفظ بنیاد اسلام بل: چودھری پرویز الٰہی کے رابطے

  • 31/07/2020 at 4:37 pm
    Permalink

    ڈریں اس وقت سے جب علامہ خادم رضوی قاضی حسین احمد مفتی محمود اور مولوی حنیف ڈار کی توہین بھی جرم ہوگی-
    عقیدت مند ملا کسی بھی توہین پر سزائے موت سے کم پر ویسے بھی راضی نہیں ہوتے-
    پرویز الہی جیسے آمریت کے پٹھو مذہب کو استعمال کرنے کا فن اچھی طرح سے ویسے ہی سیکھ چکے ہیں

    Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *