صدر ٹرمپ کا ووٹوں کی گنتی روکنے کے لیے سپریم کورٹ جانے کا اعلان


وائٹ ہاؤس میں اپنے حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کئی ریاستوں میں اپنی کامیابی کا دعویٰ کیا۔

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے صدارتی انتخاب میں اپنی فتح کا قبل از وقت اعلان کرتے ہوئے کئی ریاستوں میں تاحال جاری ووٹوں کی گنتی روکنے کے لیے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا اعلان کیا ہے۔

منگل اور بدھ کی درمیانی شب وائٹ ہاؤس میں اپنے حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کئی ریاستوں کا نام لے کر کہا کہ وہاں ہم نے کامیابی حاصل کر لی ہے۔ تاہم انہوں نے انتخابی نتائج پر خدشات کا اظہار کرتے ہوئے اسے قوم کے لیے بڑا دھوکہ قرار دیا۔

صدر ٹرمپ نے اپنی قبل از وقت فتح کا دعویٰ اور ووٹوں کے گنتی کے خلاف عدالت جانے کا اعلان ایسے وقت کیا ہے جب کئی ریاستوں میں منگل کو ہونے والے انتخاب میں ڈالے گئے ووٹوں کی گنتی تا حال جاری ہے۔

اب تک سامنے آنے والے نتائج کے مطابق صدر ٹرمپ اور ان کے حریف جو بائیڈن کے درمیان کانٹے کا مقابلہ ہے۔

جو بائیڈن 220 الیکٹورل ووٹ حاصل کر چکے ہیں جب کہ ٹرمپ نے 213 الیکٹورل ووٹ حاصل کر لیے ہیں۔ کسی بھی امیدوار کو کامیابی کے لیے 538 میں سے 270 الیکٹورل ووٹ درکار ہیں۔

صدر ٹرمپ نے حامیوں سے اپنے خطاب میں کہا کہ ہمیں ٹیکساس میں جیتنے کی ضرورت تھی جہاں ہم جیت گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم اوہائیو اور مشی گن سے بھی جیت گئے ہیں۔ جارجیا، شمالی کیرولائنا اور پینسلوینیا میں بھی شاندار کارکرگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ صدر کا مزید کہنا تھا کہ وہ کامیابی کا جشن منانے کے لیے تیار ہیں۔

صدر ٹرمپ جب اپنے حامیوں سے خطاب کر رہے تھے اس وقت تک پینسلوینیا، وسکونسن اور مشی گن جیسی اہم سمجھی جانے والی ریاستوں کے نتائج آنا باقی تھے۔ ان ریاستوں سے آنے والے نتائج امیدواروں کو حاصل الیکٹورل ووٹ پر اثر انداز ہو سکتے ہیں۔

صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ "ہم چاہتے ہیں کہ تمام ووٹوں کی گنتی کو روک دیا جائے کیوں کہ اب مزید ووٹنگ نہیں بلکہ ووٹوں کی گنتی ہونا ہے۔”

خطاب سے قبل صدر ٹرمپ نے اپنے ایک ٹوئٹ میں دعویٰ کیا تھا کہ ہم فتح کے قریب ہیں لیکن انتخابات چوری کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

https://twitter.com/realDonaldTrump/status/1323864823680126977

ٹوئٹر نے صدر ٹرمپ کی مذکورہ ٹوئٹ کو لیبل لگاتے ہوئے اسے متنازع قرار دیا اور کہا کہ انتخابات سے متعلق اس ٹوئٹ میں گمراہ کن معلومات ہو سکتی ہیں۔

دوسری جانب ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ انتخابات میں کامیابی کی جانب گامزن ہیں۔


Facebook Comments - Accept Cookies to Enable FB Comments (See Footer).

وائس آف امریکہ

”ہم سب“ اور ”وائس آف امریکہ“ کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے مطابق ”وائس آف امریکہ“ کی خبریں اور مضامین ”ہم سب“ پر شائع کیے جاتے ہیں۔

voa has 3310 posts and counting.See all posts by voa