جمعیت علمائے اسلام نے مولانا شیرانی سمیت پارٹی پالیسی سے انحراف کرنیوالے اراکین کی رکنیت ختم کر دی

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جمعیت علمائے اسلام ف کے اراکین کی طرف سے پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی پر ڈسپلنری کمیٹی نے متعلقہ ارکان کی رکنیت ختم کردی۔ رکنیت سے ہاتھ دھونے والے رہنمائوں میں مولانا شیرانی، حافظ حسین احمد، مولانا گل نصیب اور مولانا شجاع الملک شامل ہیں۔ اطلاعات کے مطابق چاروں رہنماؤں کو نکالنے کا فیصلہ پارٹی ڈسپلنری کمیٹی نےکیا۔ ذرائع کے مطابق کمیٹی نے چاروں رہنماؤں کو رکنیت ختم کر کے پارٹی سے نکال دیا۔

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق مولانا شیرانی نے جمعیت علماء اسلام اور پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کو جھوٹا قرار دیتے ہوئے کہا کہ فضل الرحمان ہمیشہ سے جھوٹ بولنے کے ماہر ہیں، وہ اسٹیبلشمنٹ سے ڈیل کیلئے جلسے جلوس کر رہے ہیں، وہ خود سلیکٹڈ ہیں اور سلیکٹ ہو کر آئے ہیں۔ مولانا شیرانی نے کہا کہ انہیں عمران خان کی کئی پالیسیوں سے اتفاق ہے، عمران خان کی حکومت یہ پانچ سال پورے کرے گی اور اگلے پانچ سال بھی ان کے ہی ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ ان کا مولانا فضل الرحمان سے اختلاف ان کے جھوٹ بولنے پر ہے۔ مولانا شیرانی نے کہا کہ بلوچستان میں جے یو آئی کے پرانے کارکن الگ دفتر قائم کریں، جے یو آئی کسی کی جاگیر نہیں، یہ ان کی اپنی جماعت ہے تو اس لیے دوسری جماعت کیوں بنائیں؟

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •