کشمیر کے چند ممکنہ حل

پاک و ہند کی آزادی سے ہی کشمیر دونوں ممالک کے مابین فساد کی جڑ ثابت ہوا ہے۔ 71 سال بعد بھی مسئلہ کشمیر پاک و ہند تعلقات میں اہم مقام رکھتا ہے۔ اس تنازعہ کے بیج تقسیم کے وقت ہی بو دیے گئے تھے جب 565 ریاستوں کی اپنی مرضی سے پاکستان یا ہندوستان…

Read more

پولیس کو جدید اور مؤثر بنانے کا منصوبہ

نئے چیلنجز ’ٹیکنالوجی‘ معاشی اور سیاسی ترقی کے نئے تناظر ’عوام کی امن وامان سے وابستہ امیدوں کے لیے ایماندار‘ قابل ’پیشہ ور اور عوام دوست پولیس کے لیے محکمہ پولیس میں اصلاحات بہت ضروری ہیں۔ اصلاحات کی ضرورت تو ہمیشہ سے رہی ہے اور وقت کے ساتھ ساتھ ترمیم بھی ہوتی رہی ہے۔ وہ دن دور نہیں جب محکمہ پولیس، معاشرے میں جرائم کی روک تھام کرنے والا پہلا مؤثر ادارہ بن کے ابھرے گا۔ 22 کروڑ آبادی پر مشتمل پاکستان آزادی سے لے کر اب تک برطانوی نو آبادیاتی نظام پر چل رہا ہے۔

ملک کی پولیس ابھی تک 1861 کے بنائے ہوئے پولیس ایکٹ کے تحت کام کر رہی ہے جو کہ کچھ تجزیہ نگاروں کے مطابق انڈیا کے اندر بڑھتی ہوئی بغاوت یا 1857 کی جنگ میں سر کشوں کو کچلنے کے لیے بنایا گیا تھا۔ 1861 سے لے کر 1902 تک پولیس اصلاحات پر صرف ایک جامع رپورٹ مرتب ہوئی جسے فریزر کمیشن رپورٹ کہتے ہیں۔ قیام پاکستان سے لے کر اب تک پولیس ریفارمز پر 26 مختلف کمیشن اور کمیٹیز بن چکی ہیں۔ جن میں سے سب سے اہم 1885 کی پولیس کمیشن رپورٹ ہے جو کہ پولیس آرڈیننس 2002 کے قیام کا باعث بنی۔

Read more

پلاسٹک سے سٹرکیں بنانے کا منصوبہ

دنیا میں تقریبا 40 ملین کلو میٹر لمبی سڑکیں ہیں اور پاکستان میں تقریبا 264,401 کلومیٹر سڑکیں، سینکڑوں بلکہ لاکھوں بیرل خام تیل سے تیار کردہ تارکول کے استعمال سے بنی ہیں اب ہم پاکستان کے دو بڑے مسائل کو حال کر سکتے ہیں سڑکوں کا خراب معیار، جہاں ہم گاڑیاں چلاتے ہیں اور ملک میں بڑھتی ہو ئی پلاسٹک فضلہ کی مصنوعات جو کہ پاکستان سالانہ 300 ملین ٹن پیدا کر رہا ہے جو کلین اینڈ گرین نیا پاکستان کے خواب کو چکناچور کر رہا ہے۔

Read more

دس لاکھ نوکریوں کا منصوبہ

پاکستان ایک زرعی ملک ہے۔ پاکستان کے پاس دنیا کا سب سے بڑا نہری نظام موجود ہے جو بنیادی طور پر ہماری نیم خشک آب وہوا کے زرعی نظام کی بقا کا ذریعہ ہے۔ ہم ذراعت سے کل مجموعی ذرعی پیداوار کا 90 فیصد حاصل کرتے ہیں۔ جس سے 20 فیصد جی ڈی پی اور 54 فیصد افراد کا روزگار وابستہ ہے۔ پنجاب کو باقی صوبوں کے لحاظ سے کلیدی حیثیت حاصل ہے کیونکہ ملکی ضروریات اناج اور خام مال کا انحصار پنجاب پر ہے۔ کپاس اس میں سرفہرست ہے جو کہ ہماری برآمدامت کا 80 فیصد ہے۔ پاکستان کے پاس 19 بیراج، 12 دریاؤں سے ملحقہ نہریں، 43 انفرادی ذرعی نہریں ہیں جن میں سے بڑی نہروں کی یک طرفہ لمبائی 64000 کلو میٹر ہے۔ صرف پنجاب میں نہری نظام کے 7 زون، 450 ششماہی نہریں اور 374 سدا بہار نہریں ہیں جن کی دونوں طرف کی لمبائی 1280000 ہے۔

Read more