آزمائش گزر گئی یا شروع ہوئی؟

انڈین پارلیمنٹ پر حملہ ہو، ممبئی کی دہشت گردی ہو یا پھر پٹھان کوٹ واقعہ۔ پاکستان کا اصرار ہے کہ اُن سب واقعات سے پاکستان کا کوئی تعلق نہیں لیکن ان واقعات کی نوعیت ایسی تھی کہ انہیں گھما پھرا کر، بھارت کسی نہ کسی طرح پاکستان سے جوڑ سکتا تھا، تاہم پلوامہ کے واقعے…

Read more

کچھ احوال مغربی سرحد کا

ہوشیار لوگ اپنے دوست اور بے وقوف اپنے دشمن بڑھانے کے ماہر ہوتے ہیں۔ جنگ اور کشیدگی کے دنوں میں تو خصوصی طور پر عقلمند لوگ کوشش کرتے ہیں کہ اصل دشمن سے نمٹنے کے لئے دور کے دشمنوں کو کم سے کم یا کم ازکم خاموش رکھیں لیکن ہم ہیں کہ دور کے دشمنوں کو بھی اپنے اصل حریف یعنی بھارت کی طرف دھکیلنے کے جتن کرتے رہتے ہیں۔ بھارت کے ساتھ کشیدگی سے قبل ہمیں بتایا جارہا تھا کہ چونکہ ہم طالبان کے معاملے میں مدد کررہے ہیں اس لئے امریکہ ان دنوں ہم سے بے حد خوش ہے اور ہمیں ایسا نظر بھی آرہا ہے کہ کارگل جنگ کی طرح بھار ت کے ساتھ حالیہ کشیدگی کو کم کرنے میں بھی امریکہ نے بنیادی کردار ادا کیالیکن ہمیں یہ بتایا جارہا ہے کہ بھارت کی حالیہ مہم جوئی کے پیچھے امریکہ کا بھی ہاتھ تھا۔

گویا ہم نے امریکہ کو بھارت کی طرف دھکیلنے کی خوب کوشش کی لیکن شکر ہے کہ امریکہ اپنی مجبوریوں کی وجہ سے اس طرف نہیں گیا۔ اسی طرح ہمارے مبینہ وزیر اعظم صاحب نے میڈیا پرسنز کو پٹی پڑھائی کہ بھارت کی مہم جوئی میں اسرائیل بھی اس کے ساتھ تھا۔ گویا ہم اسرائیل کو بھی دعوت دیتے رہے کہ وہ اپنے دوست بھارت کی حمایت میں کود پڑے۔ کچھ لوگ تو یہ سازشی تھیوری بھی پھیلاتے رہے کہ ایران بھی بھارت کی حمایت میں پاکستان پر حملے کا منصوبہ بنا چکا تھا لیکن بارشوں کی وجہ سے ایسا نہ ہوسکا حالانکہ ایرانیوں جیسے زیرک لوگ کبھی اس حماقت کا تصوربھی نہیں کرسکتے۔

Read more

مودی جی۔ پاکستان کے محسن مگر کیسے؟

پلوامہ میں کشمیری نوجوان کی فدائی حملے کے بعد امریکہ اور یورپی ممالک تو کیا چین اور سعودی عرب نے بھی شدید الفاظ میں اس کی مذمت کی اور پوری دنیا بھارت کی غمخوار نظر آئی۔ دوسری طرف گزشتہ چند سالوں کے دوران پاکستان میں اسی طرح کے سینکڑوں خودکش حملے ہوئے جن میں ہزاروں انسان لقمہ اجل بنے لیکن…

Read more

شکریہ مودی جی

مستقبل کا حال اللہ جانتا ہے اور اُس کے بارے میں حتمی بات نہیں کی جا سکتی۔ بعض اوقات کوئی ایک واقعہ اور حادثہ بھی بڑے سانحات کو جنم دے دیتا ہے۔ یوں بھی ہوتا ہے کہ پہلے قیادت خود جذباتی فضا بنا لیتی ہے اور اس کا ارادہ معاملے کو ایک خاص حد سے آگے بڑھانے کا…

Read more

سعودی ولی عہد کے دورے کے بعد

سعودی عرب اور پاکستان کے تعلق کی کئی جہتیں ہیں۔ اس کا مقابلہ اور موازنہ کسی بھی دوسرے ملک کے ساتھ تعلق سے نہیں کیا جا سکتا۔ کسی قسم کا سفارتی، معاشی اور تزویراتی تعلق نہ ہوتا تو بھی مکہ اور مدینہ کے وجہ سے یہ ملک پاکستانیوں کے لئے عزت و تکریم کا مرکز ہوتا لیکن…

Read more

پختونخوا کے بزدار اور چوہدری سرور

گزشتہ سال ملک میں عام انتخابات ہوئے جن میں خیبر پختونخوا میں اسی طرح دوبارہ پی ٹی آئی کو اکثریت مل گئی جس طرح کہ سندھ میں دوبارہ پیپلز پارٹی کو ملی۔ پی ٹی آئی کے جو رہنما وہاں ممبران صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے ان میں وزارت اعلیٰ کے امیدواروں کے طور پر پرویز خٹک،…

Read more

کیا ڈھیل، ڈیل میں بدل جائے گی؟

فریقین ایک دوسرے کے خلاف ہر حد سے گزر چکے تھے۔ مفاہمت اور مصالحت کی ساری کوششیں ناکام ہو چکی تھیں اور کسی بھی فریق کی طرف سے رتی بھر لچک کا مظاہرہ محال ہو گیا تھا۔ چنانچہ فریق اول (شریف برادران) اور ان کے لئے نرم گوشہ رکھنے والے دیگر عناصر اور پوری قوم…

Read more

ہمدردانہ گزارش

ابراہیم ارمان لونی لق و دق صحرا میں اگنے والے حسین اور خوشبودار پھول کی مانند تھے۔ ایک ایسے علاقے میں پید ا ہوئے جہاں تعلیم حاصل کرنے کی سہولت تھی نہ رواج لیکن غریب والدین کی آرزو اور ارمان لونی کا شوق تھا کہ وہ لکھ پڑھ کر اپنے والدین کا ارمان پورا کرگئے۔…

Read more

پختونوں کے دروازے پر دستک دیتی نئی تباہی

میرے منہ میں خاک لیکن اگر فریقین نے ہوش کے ناخن نہ لئے تو مجھے پورا پاکستان اور بالخصوص پختون سرزمین ایک بار پھر،ایک نئے اورخون ریز بحران کی طرف طرف تیزی سے بڑھتی نظرآرہی ہے۔ یہ بحران بنیادی طور پر گزشتہ بحران(وار آن ٹیرر) کا منطقی نتیجہ ہے لیکن بدقسمتی سے فریقین اسے جس طریقے…

Read more

تبدیلی میں تبدیلی کا امکان

بائیس جنوری کو ”یہ کمپنی نہیں چلے گی“ کے زیرعنوان اپنے کالم میں استاد محترم سہیل وڑائچ نے جو لطیفہ تحریر کیا، وہ مجھے محترم محمد علی درانی نے تھوڑی سی ترمیم کے ساتھ ایک اور پیرائے میں سنایا تھا۔ کہتے ہیں کہ ایک نابینا سردار جی کو کم عمری سے شراب پینے کی عادت…

Read more