شغرتھنگ میں تعلیمی مسائل

یوں تو سکردو شہر سے قریب تر ہونے کے باؤجود حلقہ دو کے تمام علاقے مسائل کے شکار ہیں جوکہ حلقہ حد سے زیادہ بڑا ہونے کے ساتھ آبادی کی تناسب میں اضافے کی وجہ سے ہے دوسری بات باربار عوامی ووٹ سے اقتدار میں آنے والوں کی عدم توجہی یاپھر ان کی ناکامی کی وجہ بھی ہوسکتی ہے۔ چند دنوں پہلے سوشل میڈیا کی توسط سے شغرتھنگ کے چند باشعور افراد سے رابطہ ہوا جو ایک منظم انداز میں علاقے کی تعمیر و ترقی میں مصروف عمل ہیں۔ستقچن اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے نام سے ایک سماجی تنظیم ہے جس کے کارکن ملک کے مختلف شہروں میں مقیم ہیں۔ کراچی میں مقیم تنظیم کے ذمہ داروں نے ملاقات کی خواہش کا اظہار کیاچونکہ میں بھی ایسے ہی لوگوں کی تلاش میں رہتا ہوں جو کسی سماج کی تعمیر وترقی میں مصروف ہو، اس لیے پہلی ہی فرصت میں ان سے ملاقات کو اپنے لیے غنیمت جانا اور انہیں ملاقات کے لیے دعوت دی۔ ملاقات میں کافی شکوہ شکایت سننے کو ملا۔ ایک طرف سے ان کو تسلی دینے کی کوشش کی کہ حلقہ بڑا ہونے کی وجہ سے سب کا یہی صورت حال ہے۔

Read more

علاقہ کواردو کے تعلیمی مسائل

ماضی میں علم و ادب کا مرکز اور سرزمین علماء کے نام سے منسوب علاقہ کواردو (گلگت بلتستان) میں اس وقت تعلیمی سہولیات کی فقداں کے باعث طلباء ذہنی اذیت میں مبتلا ہیں۔ اگرچہ ہر گلی کوچے میں تعلیم کے نام پہ بہت سارے پرائیوٹ سکولز بھی چل رہے ہیں مگر کسی کی تعلیمی پیاس…

Read more

کسی کو ہم نہ ملے اور ہمیں تو نہ ملا

انتظار کی گھڑیاں ختم اب فیصلے کا وقت آپہنچا ہے، جب سابقہ چیف جسٹس ثاقب نثار صاحب گلگت بلتستان کے نجی دورے پہ آئے تھے، اس وقت وہ بہت متاثر ہوئے تھے اور جی بی کیس کے سماعت کے دوران انہوں نے کئی مواقع پر اس بات کا برملا اظہار بھی کیا کہ جی بی…

Read more