EnglishUrduHindiFrenchGermanArabicPersianChinese (Simplified)Chinese (Traditional)TurkishRussianSpanishPunjabiBengaliSinhalaAzerbaijaniDutchGreekIndonesianItalianJapaneseKoreanNepaliTajikTamilUzbek

مفتی عزیز الرحمان نے طالبعلم کو بلیک میل کر کے جنسی زیادتی کا اعتراف کر لیا 

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق مفتی عزیز الرحمان نے دوران تفتیش طالبعلم سے جنسی زیادتی کا اعتراف کر لیا ہے۔

مفتی نے تفتیش میں انکشاف کیا ہے کہ ویڈیو میری ہی ہے جو صابر شاہ نے چھپ کر بنائی۔ مفتی عزیز نے ابتدائی بیان میں کہا ہے کہ طالب علم صابر کو پاس کرنے کا جھانسہ دے کر اپنی ہوس کا نشانہ بنایا۔

مفتی عزیزالرحمان نے مزید کہا کہ ویڈیو وائرل ہونے کے بعد میں خوف اور پریشانی کا شکار ہو گیا تھا۔ چنانچہ میرے بیٹوں نے صابر شاہ کو دھمکایا اور اسے کسی سے بات کرنے سے روکا۔ تاہم صابر شاہ نے منع کرنے کے باوجود ویڈیو وائرل کر دی۔

مفتی عزیز الرحمان نے کہا ہے کہ میں مدرسہ چھوڑنا نہیں چاہتا تھا اس لیے وضاحتی ویڈیو بیان جاری کیا۔ اس دوران مدرسے کے منتظمین مجھے مدرسہ چھوڑنے کا کہہ چکے تھے۔

ملزم کے مطابق مقدمہ درج ہونے کے بعد ٹاؤن شپ، شیخوپورہ اور فیصل آباد میں شاگردوں کے پاس ٹھہرتا رہا، میری اور بیٹوں کی فون لوکیشن ٹریس ہوتی رہی، اس دوران میانوالی میں چھپا ہوا تھا کہ پولیس نے گرفتار کرلیا۔

مفتی عزیز الرحمان کا کہنا ہے کہ میری فون لوکیشن ٹریس ہوتی رہی۔ میانوالی میں چھپا ہوا تھا کہ پولیس نے گرفتار کر لیا۔ مفتی عزیز نے اعتراف کیا کہ میں اپنے کیے پر بہت شرمندہ ہوں۔

خیال رہے کہ ملزم مفتی عزیزالرحمان پر طالبعلم سے زیادتی کا الزام ہے، مفتی عزیز الرحمان کی طالبعلم سے زیادتی کی ویڈیو منظر عام پر آئی تھی، ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد صدر پولیس نے مفتی عزیز الرحمان کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔

طالبعلم سے زیادتی کے واقعہ کے بعد مفتی عزیز الرحمان کو مدرسے سے نکال دیا گیا تھا جبکہ ویڈیو اسکینڈل منظر عام پر آنے کے بعد جمعیت علما اسلام نے بھی مفتی عزیز کی رکنیت معطل کر دی تھی۔

یاد رہے کہ صابر شاہ نے مفتی عزیز الرحمان پر اپنی ایف آئی آر میں یہ الزام لگایا تھا

”درجہ رابعہ کے امتحان کے دوران مفتی عزیز الرحمان جو کہ لاہور کے نگران اور متولی تھے، انہوں نے مجھ سمیت ایک اور لڑکے پر الزام لگایا کہ تم نے اپنی جگہ پر کسی دوسرے لڑکے کو امتحان دینے کے لیے بٹھایا ہے۔ اس بات پر انہوں نے مجھے تین سال کے لیے وفاق المدارس میں امتحان دینا ممنوع قرار دیا جس پر میں نے مفتی صاحب کی بہت منت سماجت کی مگر وہ نہ مانے مگر انہوں نے کہا کہ اگر تم میرے ساتھ بدکاری (سیکس) کرو اور مجھے خوش کر دیا کرو تو میں کچھ سوچ سکتا ہون لہذا با امر مجبوری میں ان کی چال اور زیادتی کا نشانہ بنتا گیا۔ مفتی عزیز الرحمان نے کہا کہ میں تمہیں وفاق کی پابندی سے بھی ہٹوا دوں گا اور امتحان میں بھی پاس کروا دوں گا مگر تین سال سے مسلسل ہر جمعہ زیادتی کا نشانہ اور جنسی استحصال بننے کے باوجود میں میرے لیے کچھ اور نہ کیا اور مزید بلیک میل کرنے لگا“ ۔

مزید تفصیل کے لیے یہ خبر ملاحظہ کریں۔
صابر شاہ نے مفتی عزیز الرحمان کے خلاف ایف آئی آر کٹوا دی، عمر قید تک ہو سکتی ہے

Comments - User is solely responsible for his/her words

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے