تبدیلی کا تبادلہ!

عرصہ بعید سے تھوڑا قریب بلکہ عن قریب کی بات ہے کہ ایک ملک تھا ناپرساں، اس کو ناپرساں اس لئے کہا جاتا تھا کہ یہاں کوئی بھی کسی کا پرسانِ حال نہ تھا یہاں تک کہ جس شیر نے بکری کے ساتھ ایک گھاٹ پر پانی پینا تھا خود گھاٹ گھاٹ کا پانی پی…

Read more

پارلیمنٹ ہاؤس، دیوار ِ گریہ اور ” حضرت مولانا “

  قصہ منقول ہے کہ ایک دن پارلیمنٹ ہاؤس کے سکیورٹی گارڈ نے اپنےچیف کو اطلاع دی کہ رات کی تاریکی میں جب یہ علاقہ مشعلِ افرنگ سے بقعہ نور بنا ہوتا ہے تو ایسے میں ایک مردِ با ریش شائبہ درویش جس نے چہرے کو چار خانے کے عمامے سے ڈھانپا ہوتا ہے شکل…

Read more