ویر مہان: امریکہ میں بیس بال کے پہلے انڈین کھلاڑی ڈبلیو ڈبلیو ای کے ریسلر کیسے بنے؟

ہرشل اکوڑے - بی بی سی مراٹھی


ایک زمانہ تھا جب انڈیا میں کرکٹ کے ساتھ ساتھ ورلڈ ریسلنگ انٹرٹینمنٹ (ڈبلیو ڈبلیو ای) اور ورلڈ ریسلنگ فیڈریشن (ڈبلیو ڈبلیو ایف) کے شوز بہت مشہور ہوا کرتے تھے۔

انڈر ٹیکر، کین، جان سینا اور دی راک جیسے بڑے سپر سٹار اس وقت ڈبلیو ڈبلیو ای میں سرِفہرست تھے۔ انڈیا کے ‘دی گریٹ کھلی’ نے بھی ڈبلیو ڈبلیو ای میں کھلبلی مچا رکھی تھی۔

کھلی لوگوں میں کافی مقبول ہو گئے تھے۔ اب اس فہرست میں ’ویر مہان‘ کا نام بھی شامل ہو گیا ہے جن کا تعلق انڈیا سے بتایا گیا ہے۔

سوشل میڈیا پر ویر مہان کے بارے میں بھی خوب بات ہو رہی ہے۔ ڈبلیو ڈبلیو ای میں شمولیت کے بعد ویر مہان کا خالص انڈین انداز لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کر رہا ہے۔

لوگ جاننا چاہتے ہیں کہ ویر مہان کون ہیں اور ڈبلیو ڈبلیو ای میں اُن کی انٹری پر اتنی چرچا کیوں ہے۔

ویر مہان کون ہیں؟

ویر مہان کا اتر پردیش کے ایک چھوٹے سے گاؤں سے ڈبلیو ڈبلیو ای تک کا سفر کافی مشکل اور دلچسپ رہا ہے۔

ویر مہان کا اصل نام رنکو سنگھ راجپوت ہے اور وہ 8 اگست 1988 کو اترپردیش کے روی داس نگر ضلع کے گوپی گنج علاقے میں پیدا ہوئے۔

رنکو سنگھ کے والد ٹرک ڈرائیور کے طور پر کام کرتے تھے اور ان کے نو بچے ہیں۔ ان میں سے ایک رنکو سنگھ راجپوت ہیں۔ سنگھ خاندان گوپی گنج کے ایک چھوٹے سے گاؤں میں رہتا ہے۔

انھیں بچپن سے کھیلنے کا شوق رہا ہے اور وہ ریسلنگ بھی کرتے رہے ہیں۔

بیس بال میں رفتار

رنکو سنگھ اپنے سکول کے دنوں میں جیولن پھینکا کرتے تھے۔ انھیں جونیئر نیشنل مقابلوں میں تمغہ بھی ملا۔ اس کے بعد انھوں نے گرو گوبند سنگھ سپورٹس کالج لکھنؤ میں داخلہ لیا۔

سال 2008 میں رنکو نے انڈین ریئلٹی ٹی وی شو ’دی ملین ڈالر آرم‘ میں بھی حصہ لیا۔ اس شو میں تیزی سے بیس بال پھینکنے والے کھلاڑیوں نے حصہ لیا تھا۔ یہ بیس بال میں ٹیلنٹ ہنٹ شو تھا۔

اس ٹیلنٹ شو میں رنکو سنگھ کو اپنے جیولن پھینکنے کے تجربے سے کافی فائدہ ہوا۔ حالانکہ رنکو سنگھ نے اس سے پہلے کبھی بیس بال نہیں کھیلا تھا لیکن اپنے مضبوط جسم اور رفتار کی وجہ سے انھوں نے ٹیلنٹ شو جیت لیا۔

رنکو سنگھ نے اس شو میں 87 میل فی گھنٹہ یا 140 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے بیس بال پھینکی اور وہ پہلے نمبر پر رہے۔ اس کہانی پر ایک فلم بھی بنی ہے۔

اس کے بعد رنکو سنگھ کی بیس بال میں دلچسپی بڑھ گئی۔ وہ بیس بال میں اپنا کیریئر بنانے کے لیے امریکہ چلے گئے۔ وہاں انھوں نے بیس بال کی مختلف ٹیموں میں حصہ لیا۔ بالآخر انھوں نے پیٹرزبرگ پائریٹس کے ساتھ ایک معاہدہ کیا اور وہ کامیاب رہا۔

یہ بھی پڑھیے

مائیک ٹائسن نے جہاز میں ’بوتل پھینکنے والے‘ ساتھی مسافر پر مُکے برسا دیے

اولمپک تاریخ میں تمغہ جیتنے والے واحد پاکستانی باکسر ملک چھوڑنے پر مجبور کیوں ہوئے؟

’دی راک‘ جیسے ریسلر ہالی وڈ کے کامیاب سٹارز کیسے بن جاتے ہیں؟

’ناقابلِ تسخیر‘ حبیب نورمحمدوف ریٹائر، رونالڈو، مکگریگر کا خراجِ تحسین

https://twitter.com/VeerMahaan/status/1511196972031561734

رنکو سنگھ راجپوت ایک پیشہ ور امریکی بیس بال ٹیم میں کھیلنے والے پہلے انڈین کھلاڑی بھی بنے۔ انھوں نے بیس بال پھینکنے کی رفتار 87 میل فی گھنٹہ سے بڑھا کر 90 میل فی گھنٹہ کر دی۔ پھر انھوں نے 2009 سے 2016 تک دنیا بھر کی کئی لیگز میں حصہ لیا۔ ان کے کھیل نے دنیا کی توجہ حاصل کی۔

سنہ 2018 میں رنکو سنگھ نے بیس بال کھیل کو الوداع کہا۔ اس کے بعد انھوں نے پروفیشنل ریسلنگ پر توجہ دینا شروع کر دی۔ سال 2018 میں انھوں نے ڈبلیو ڈبلیو ای کے ساتھ معاہدہ کیا۔

رنکو یا ویر مہان نے انڈین کھلاڑی سورو گوجر کے ساتھ مل کر ’دی انڈس شیر‘ کے نام سے ایک ٹیم بنائی۔ انھوں نے ایک ساتھ مل کر ڈبلیو ڈبلیو ای این ایکس ٹی میں حصہ لیا۔ ابتدائی مرحلے میں رنکو سنگھ ڈبلیو ڈبلیو ای میں اپنے پہلے نام ’رنکو‘ سے مشہور تھے۔

ان کی ٹیم میں جندر محال نام کا ایک اور رکن شامل کیا گیا۔ اس وقت رنکو نے اپنا نام ’ویر‘ رکھ لیا تھا اور وہ اسی نام سے کئی شوز میں نظر آئے۔

ویر، شاکی اور جندر پر مشتمل ٹیم نے لگاتار 12 میچ جیتے۔ آخر کار 2021 میں ویر کئی وجوہات کی بنا پر اپنی ٹیم سے الگ ہو گئے۔ انھوں نے ایک آزاد ریسلر کے طور پر ڈبلیو ڈبلیو ای را کے ساتھ معاہدہ کیا۔ اس بار انھوں نے اپنا نام ’ویر مہان‘ رکھا۔

ویر مہان کا ٹرمپ کارڈ کیا ہے؟

جب سمارٹ فون نہیں تھے، ڈبلیو ڈبلیو ای کے کھلاڑی اپنے ٹرمپ کارڈز کے لیے جانے جاتے تھے۔ اس ٹرمپ کارڈ میں ڈبلیو ڈبلیو ای ریسلر کے قد، وزن اور دیگر خصوصیات کے بارے میں معلومات ہوتی تھیں۔

تو پھر ویر مہان کا ٹرمپ کارڈ کیا ہے؟ ویر مہان کے مضبوط جسم کے بارے میں بتایا گیا ہے۔ ان کا قد چھ فٹ چار انچ اور وزن 125 کلو گرام ہے۔

https://twitter.com/VeerMahaan/status/1461107591514361863

ڈبلیو ڈبلیو ای کے شو میں ویر مہان خالص انڈین انداز میں نظر آئے۔ کندھوں تک آنے والے ان کے بال، کالی آنکھیں، لمبی داڑھی اور ماتھے پر چندن کی لکیروں کی وجہ سے ان کی شخصیت اور بھی مختلف نظر آتی ہے۔

اس کے ساتھ ہی بظاہر ان کی شخصیت کی خاص بات ان کے ماتھے پر روایتی انڈین انداز میں لگا چندن کا ٹیکہ ہے۔ ان کے پرانے ساتھی سورو گوجر بھی ان کی طرح ماتھے پر چندن لگاتے تھے۔

ویر مہان کے سینے پر بڑے حروف میں ماں لکھا ہوا ہے، جو ہر کسی کی توجہ اپنی طرف مبذول کرواتا ہے۔ وہ گلے میں رودراکش کی مالا اور کالے کپڑے پہنتے ہیں اس انداز میں وہ بالکل مختلف نظر آتے ہیں۔

ویر مہان نے چار اپریل کو ڈبلیو ڈبلیو ای میں اپنے ہی انداز سے ڈیبیو کیا۔ گذشتہ سال اکتوبر کے مہینے میں ویر کا ڈبلیو ڈبلیو ای را میں کافی چرچا ہوا تھا۔

بڑے پیمانے پر ان کی پبلیسِٹی بھی کی گئی۔ آخر کار چار اپریل کو ویر مہان میچ کے لیے رنگ میں داخل ہوئے۔

اس میچ میں ویر نے باپ بیٹے کی جوڑی رے اور ڈومینک میسٹریو کو شکست دی۔ سوشل میڈیا پر اس مقابلے کے بارے میں کافی بات ہوئی تھی۔


Facebook Comments - Accept Cookies to Enable FB Comments (See Footer).

بی بی سی

بی بی سی اور 'ہم سب' کے درمیان باہمی اشتراک کے معاہدے کے تحت بی بی سی کے مضامین 'ہم سب' پر شائع کیے جاتے ہیں۔

british-broadcasting-corp has 24136 posts and counting.See all posts by british-broadcasting-corp

Subscribe
Notify of
guest
0 Comments (Email address is not required)
Inline Feedbacks
View all comments