کراچی کے کھٹمل اور سندھ اسمبلی میں کرسچن پرسنل لاز

بس یہ خیال سار راستہ ساتھ رہا کہ کراچی میں بہت محتاط ہو کر رہنا ہے۔ جانے سے پہلے بیوی نے بھی کچھ ایسی ہی نصیحتیں کیں مختصراً جو کسی سے کوئی چیز نہ لی کر کھانا، سامان کی خود حفاظت والے پیرائے میں ہوتی ہیں۔ اس ًمحتاط طرزِ عمل میں ایک تو حد سے…

Read more

پاکستانی مسیحیوں کا عالمی دہشتگردی پر موقف

سوال یہ ہے کہ کیا سری لنکا میں ہونے والے چرچ دھماکوں اور نیوزی لینڈ میں ہونے والی دہشت گردی میں کوئی فرق ہے، سوال توویسے یہ بھی ہے کہ کیا پاکستانی مسیحیوں کی اکثریت کیا اپنے آپ کو کسی عالمگیر مسیحی تحریک کے ساتھ وابستہ سمجھتی ہے۔ نیوزی لینڈ میں ایک دہشتگرد نے فارنگ…

Read more

روبوٹ 2.0: پرندوں پر توجہ واہ واہ

میں نے آج تک کبھی کسی مووی پرنہیں لکھا کیونکہ مجھے لگتا ہے کہ میں اس موضوع پر لکھ ہی نہیں سکتا۔ لیکن کیا ہوا کہ پچھلے دنوں ایک سول سوسائٹی تنظیم کے توسط سے یونیورسٹی سٹوڈنٹس کے ایک گروپ سے ملاقات ہوئی۔ باقاعدہ گفتگو کے بعد غیر رسمی گفتگو میں کچھ نوجوانوں نے بالی ووڈ فلم روبوٹ 2.0 پربات چیت کی، میں نے یہ مووی دیکھی نہیں تھی لیکن ان کی گفتگو سے میری دلچسپی بڑھی، وہ بار بار ایک لفظ بھکشی بول رہے تھے۔ میں نے اپنی قابلیت کا پردہ چاک نہ ہونے دیا اور مووی دیکھنے کا ارادہ کر لیا کہ اس لفظ کو ہی سمجھ سکوں۔

اور پھر یہ مووی دیکھی۔ کرن جوہر کی یہ مووی مجھے اپنے بچپن میں لے گئی، جب ہم اپنے سکول میں موجود سکھ چین کے درخت پر چوئی چلانگڑ کھیلا کرتے تھے، چوئی چلانگڑ کو مہذب لفظوں میں کیا کہتے ہیں مجھے نہیں پتہ۔

Read more

مسلم لیگ ن کو کیا کرنا چاہیے

تو کیا مسلم لیگ ن اور اس کی قیادت نے سایسی عمل سے باہر رہنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ جس طرح کے بیانات نواز شریف دے رہے ہیں کیا وہ شکست کا اعلا ن ہے، اگر مسلم لیگ ن کی قیادت یہ سمجھتی ہے کہ حکومت کی اپنی غلطیاں اسے غیر مقبول بنا دیں…

Read more

مسیحی اور شادی کے قانون سے پہلے طلاق کا قانون

یہ بہت دلچسپ بات ہے کہ پاکستان میں مسیحی آبادی کے لیے شادی کے قانون سے پہلے طلاق کا قانون بنایا گیا۔ انگریزوں کے دور میں سن اٹھارہ سو انسٹھ میں مسیحی طلاق کا قانون بنا جبکہ اٹھارہ سو بہتر میں شادی کا قانون بنایا گیا۔

انیس سو اکیاسی تک مسیحی طلاق کے قانون میں کوئی بہت بڑی ترمیم نہیں ہوئی ماسوائے چند پروسیجرل تبدیلیوں کے لیکن جنرل ضیا الحق کے دور میں جہاں دیگر قوانین کے ساتھ بلاتکار ہوا وہیں مسیحی طلاق کے قانون میں بھی ترمیم کر دی گئی۔ اس ترمیم نے مسیحی خواتین کے لیے بے تحاشا مشکلات پیدا کر دیں۔ اس ترمیم کے ذریعے قانون کا سیکشن سات جو عورت یا مرد میں سے کسی کو بھی یہ حق دیتا ہے کہ وہ دیگر وجوہات کے علاوہ اس وجہ سے بھی طلاق کا حق رکھتے ہیں کہ ان کو اپنے جیون ساتھی کے نامناسب رویہ کا سامنا ہے، اور وہ مزید اکٹھے نہیں رہ سکتے۔ اس سیکشن کے ختم ہونے سے طلاق کے قانون کی سیکشن دس کے مطابق مرد اپنی بیوی کو طلاق دینے کے لیے زنا اور حرام کاری کا الزام لازمی لگائے گا۔ صرف اسی ایک الزام کو ثابت کر کے وہ اپنی بیوی کو چھوڑ سکتا ہے۔ اس قانون کے تحت بے شمار خواتین ذلت اٹھا رہی ہیں۔

چلتے چلتے ایک اور بات موجودہ قانون میں ایک اور تبدیلی بھی ہونے والی ہے، موجودہ قانون کے مطابق جو مرد کسی کی بیوی کے زنا حرام کاری کرتا ہے اور عورت کا خاوند عدالت میں اسی زنا حرام کاری کی بنا پر طلاق مانگتا ہے وہ اس زانی مرد سے اپنی بیوی کو استمعال کرنے پر معاوضہ بھی طلب کرسکتا ہے اب وہ کیا کہتے ہیں جو اس قانون میں تبدیلی کو بائبل میں تبدیلی سے منسوب کرتے ہیں۔

Read more

مسیحی خاکروب کی خوش قسمتی

کچھ عرصہ پہلے فیصل آباد کی ایک بڑی مسیحی آبادی میں ایک پرایئوٹ کالج کی طرف سے خاکروبوں کی ضرورت ہے کے بینر، لگانے پر اس آبادی کے پڑھے لکھے لوگوں نے بہت احتجاج کیا، ہمارے دوست امجد پرویز تو باقاعدہ اس کالج میں گئے اور ان کو بتایا کہ آپ نے ہمارے علاقے میں…

Read more

مسیحی ارکانِ اسمبلی کو وزارت کیوں نہیں ملی

صوبہ خیبر پختون خواہ میں کابینہ کی تشکیل انتیس اگست تک ملتوی ہو گئی ہے۔ خبر یہ ہے کہ کابینہ کی تشکیل میں باہمی اختلافات ہیں۔ شاہ محمد جو سابق کابینہ میں وزیرِ ٹرانسپورٹ تھے، وہ مشیرِ ٹرانسپورٹ کا عہدہ قبول نہیں کر رہے، ان کا اصرارہے کہ جنوبی اضلاع جہاں سے شاہ محمد کا…

Read more