سرفراز سے رانگ نمبر لگ گیا

پاکستانی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کے لئے دورہ جنوبی افریقہ اختتام پذیر ہوگیا۔ سیاہ فام کرکٹر اینڈیلے فہلک وایو کو نسل پرستانہ جملے کسنے پر آئی سی سی نے چار میچز کی پابندی لگادی۔ شعیب ملک کو پاکستانی ٹیم کا قائم مقام کپتان بنا دیا گیا۔ سرفراز کے مخالفین خوش ہیں اور کیوں نہ ہوں ان کی دلی مراد جو پوری ہوگئی۔ ایک تیر سے دو شکار ہوگئے سرفراز ٹیم سے بھی گئے اور سینتیس سالہ شعیب ملک کپتان بھی بن گئے۔ لیکن داغ دار ماضی رکھنے والے شعیب ملک ہی کیوں؟

شعیب نے دو ہزار سات سے دوہزار نو تک پاکستان کی قیادت کی۔ لاہور میں سری لنکا سے ون ڈے سیریز ہارنے پر پی سی بی نے انھیں برطرف کردیا تھا۔ صرف یہی نہیں پی ایس ایل کے پہلے سیزن میں کراچی کنگز کی قیادت شعیب ملک کو ملی تھی لیکن اہم میچز میں مشکوک فیصلے کرنے پر شعیب ملک کو فرنچائز نے دوران ایونٹ ہی قیادت سے ہٹایا دیا تھا جس پر بہت واویلا بھی ہواتھا۔ شعیب ملک ڈومیسٹک ٹی ٹوئنٹی میچ جان بوجھ کر ہارنے کا اعتراف بھی کرچکے ہیں۔

Read more

مصباح اور یونس کیوں یاد آتے ہیں؟

جنوبی افریقہ میں قومی ٹیم کو چھ سال بعد پھر وائٹ واش شکست ہوئی توشائقین اور ناقدین نے پاکستان کے کامیاب ترین ٹیسٹ کپتان مصباح الحق اور کامیاب ترین بلے باز یونس خان کو بے حد یاد کیا۔ سوشل میڈیا پر ”مس یو“ کا ٹرینڈ بن گیا۔ ایسے ایسے بیانات داغے جیسے ان کی موجودگی میں پاکستان یہاں جیتا ہو۔ حقیقت بالکل مختلف ہے۔ مس یو کو یاد کرنے سے پہلے اعداد و شمار پر نظر ڈالیے۔

دوہزار تیرہ کے دورہ جنوبی افریقہ میں مصباح اور یونس کی موجودگی میں پاکستان کو وائٹ واش شکست ہوئی۔ پاکستان اپنی تاریخ کے کم ترین اسکور 49 رنز پر ڈھیر ہوگیا، مصباح اور یونس کچھ نہ کرپائے۔ تین بار پاکستان دو سو کا ہندسہ بھی عبور نہیں کرپایا۔ جوہانسبرگ ٹیسٹ تو پاکستان اننگز سے ہارا تھا۔

Read more

کیا سرفراز احمد کی چھٹی ہونے والی ہے؟

دورہ جنوبی افریقہ کسی بھی ٹیم کے لئے آسان نہیں ہوتا، خاص کر پاکستان کے لئے تو یہ دورہ کبھی بھی آسان نہیں رہا۔ بڑے بڑے تیس مار خان جنوبی افریقہ گئے اور خالی ہاتھ واپس آئے۔ ایسے میں سرفراز کی ٹیم سے امیدیں رکھنا ٹھیک بھی نہیں تھا، دیار غیر اڑان بھرنے سے پہلے ہی سرفراز کو نتائج کا علم تھا یا یوں کہیں خطرے کی بو آگئی تھی۔ سرفراز جاتے جاتے اشارہ دے گئے تھے کہ ”اگر پرفارمنس نہ دی تو مجھے ہٹا دیا جائے گا“ اضافی وکٹ کیپر، ایک آل راؤنڈر جو کوچ کی نظر میں ”ریلوکٹا“ ہیں اور تین زخمی کھلاڑیوں کا بوجھ لئے پاکستان کی سولہ رکنی ٹیم جنوبی افریقہ پہنچی۔

Read more