آئیڈیا

اس تحریر کا عنوان انگریزی میں ہے۔ میں نہیں جانتا اس کا اردو مطلب کیا ہے۔ میں ڈھونڈ کر نکال بھی لیتا تو شاید لوگوں کو سمجھ نہ آئے مگر میں چاہتا ہوں کہ زیادہ سے زیادہ اس تحریر کو لوگ پڑھیں۔ اس تحریر میں کوئی ادبی اصولوں کا خیال نہیں رکھا گیا۔ نہ ہی…

Read more

انتہاپسندی ہماری فطرت میں ہے

میدان میں تمام لڑکے جو کہ ایک ہی وردی میں ملبوس تھے، اور کسی بات چیت میں مصروف تھے۔ اور پھر کچھ دیر کے بعد دونوں گروہ آگے بڑھے، ایک نے ”غلام ہیں غلام ہیں“ اور دوسرے نے ”نعرہ حیدری“ جیسے الفاظ سے ایک دوسرے کی طرف پیش قدمی ہوئی اور دونوں گروہ گتھم گتھا ہو گئے۔ گھمسان کا رن پڑا، کرسیوں کے وار ہوئے، سر پھٹے اور یہاں تک کہ پولیس والے آئے، اپنے جاننے والے ”عاشقان“ کو ایک طرف کیا اور دوسروں کو گاڑی میں بٹھایا اور لے گئے۔ اگلے دن بچے کھچے کلاس میں آئے اور وہ لیکچرر صاحبہ جو کہ گورنمٹ کالج آج کامرس کی دو سب سے آزاد خیال شخصیات میں شامل ہوتی تھیں وہ بھی اپنے کالج لیول کے ”عاشقانِ رسول“ کو بڑھاوا دیتی رہیں اور اینٹ سے اینٹ بجانے کی تاکید کرتی رہیں۔

Read more

خون آشام انسان بن سکتے ہیں، دانشور کی واپسی ممکن نہیں

مجھے آج بھی وہ شام اک اک لمحے کی تفصیل کے ساتھ یاد ہے۔ میں لندن کی فلیٹ اسٹریٹ کی راہ پر بھٹک رہا تھا۔ خلیفہ قرطبہ عبد الرّحمٰن سوئم نے مجھے سفارتی وجوہ کی بنیاد پر یہاں بھیجا تھا۔ انگلستان اس وقت موجودہ انگلستان کے بالکل بر عکس تھا۔ میں اس دورے کے دوران…

Read more

ناسٹیلجیا اور اردو

کبھی کبھی کچھ ایسے حقیقی یا غیر حقیقی واقعات، اشیاء، لوگ یا مقامات انسان کی زندگی یا دماغ میں ہی وقوع پذیر ہوتے ہیں جو کہ دماغ کے گہرے ترین کونوں میں چھپ کر بیٹھ جاتے ہیں۔ اور جیسے ہی اس کے متعلق کسی بھی شے حتی کہ اس سے جڑے ایک لفظ سے بھی…

Read more

توثیق حیدر بچپن کا سفیر

جب تک ہم بچے رہتے ہیں، بہت خود مختار اور آزاد ہوتے ہیں۔ خیالوں میں ہی کئی جہاں بنا ڈالتے ہیں۔ کبھی صبح اٹھتے، سکول جاتے ہوئے، سردی میں خوشگوار حرارت سے بھرپور دھوپ سے ڈھکے رستے میں۔ اور کبھی سونے سے پہلے پنکھے کی ہوا ایسے ہی لگتی ہے جیسے اُڑتے ہوئے فضا آپکے…

Read more