سمندر شور کرتا ہے

رات کے پچھے پہر، شہر کے شور شرابے سے دور، ساحل پر بنے ہٹ میں وہ تنہابیٹھا خیالوں کے سمندر میں غوطے کھا رہا تھا۔ وہ جو انسانوں کے ہجوم میں رہتے ہوئے، دوستوں کے درمیان باتیں کرتے ہوئے اکثر تنہا رہتا تھا۔ سمندر کے پاس پہنچ کر خود کو تنہا محسوس نہیں کرتا۔ لیکن…

Read more

ایک ہیرو کی موت

ٹی وی چینلز پر ہم روزانہ کئی مناظر دیکھتے ہیں اخبارات میں خبروں کے ساتھ تصاویر بھی نظروں سے گزرتی ہیں اور ہم انہیں بھول جاتے ہیں۔ لیکن چند مناظر اور تصاویر ایسی ہوتی ہیں جو ذہن پر نقش ہوجاتی ہیں۔ ان کا اثر طویل عرصے تک رہتا ہے۔ ایسا ہی ایک منظر اور تصویر…

Read more

انصاف کی دیوی کی گمشدگی

باباعبداللہ کی عمر سو سال سے اوپر ہے۔ لیکن انہیں کسی کے سہارے کی ضرورت نہیں پڑتی۔ اپنے پاوں پر کھڑے ہیں۔ گھر کے صحن میں چہل قدمی کرتے رہتے ہیں۔ آہستہ آہستہ، چھوٹے چھوٹے قدم اٹھاتے ہیں۔ ظاہر ہے سو سال سے اوپر کا آدمی پھرتی اور تیزی کے ساتھ چلنے سے تو رہا۔ دن کے وقت نظر بالکل ٹھیک کام کرتی ہے تاہم رات کے وقت انہیں تھوڑی دقت ہوتی ہے۔ یادداشت کچھ کچھ متاثر ہوئی ہے۔ لیکن پانچوں کی وقت کی نماز نہیں بھولتے۔ یہ ان کے پچپن کا معمول ہے۔ گاؤں کے مولوی کے سعادت مند بیٹے جو ٹھہرے۔ قرآن بھی والد صاحب سے ہی پڑھا۔ اذان نہ سن سکیں تو اپنے کمرے سے نکل کر آواز دے کر بچوں سے تصدیق کرلیتے ہیں۔

Read more

غربت، بیروزگاری اور خودکشی

دیکھئے! ہوسکتا ہے آپ کی طبیعت پر گراں گزرے۔ یہ بھی ہوسکتا ہے کہ آپ کا دل دکھ سے بھرجائے یا کم از کم، جیسا کہ گارشیا مارکیز نے کہا ہے، آپ کے حلق میں کڑوے باداموں کا ذائقہ آجائے۔ لیکن یقین جانیے میرا ارادہ کسی کو تکلیف پہنچانا ہرگز نہیں ہے۔ لیکن سچ پوچھئے…

Read more