پہلی لڑکی – عصمت چغتائی کا رومانی افسانہ

اوپر اپنے کمرے میں مریم سسکیوں سے رو رہی تھی انیس ان کی انگلیاں چوم کر سمجھا رہے تھے۔ ”ڈارلنگ بے بی، دنیا داری تو نباہنا ہی پڑے گی ویسے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ تم میری ہو اور میری رہو گی“۔

”مجھے ڈر لگتا ہے انیس“۔
”اس میں ڈرنے کی کیا بات ہے ہنی“۔
”اسے پتا چل گیا تو؟ “ اس نے گھٹی ہوئی آواز میں کہا۔

”بڑا گاؤدی سا ہے، اسے کیا پتا چلے گا؟ دیکھا نہیں تم نے کس بری طرح گھوررہا تھا تمہیں؟ “
”گدھا کہیں کا! “ مریم غصے سے کانپ اٹھی۔

Read more