ایک بے روزگار سڑک چھاپ صحافی کی کہانی

میں ایک صحافی تھا، شاید اب بھی ہوں اور ہمیشہ رہوں گا لیکن اب میرے پاس کوئی روزگار نہیں۔ میں نے صحافت کے لئے اپنی اچھی خاصی جاب قربان کی تھی، اگر میں اب بھی وہ جاب کررہا ہوتا تو شاید لاکھوں میں کمارہا ہوتا لیکن مجھ پر کسی نے جادو ٹونا کرکے مجھے بے راہ روی کا شکار کردیا۔ یہ کہانی شروع ہوئی آج سے تقریباً 10 سال پہلے جب میں متحدہ عرب امارات میں خاصی خوش و خرم زندگی گزاررہا تھا۔ پیسے کمارہا تھا، گاڑی تھی، گھر تھا، اچھی جاب تھی اور سب سے بڑی بات میرے پاس اماراتی ڈرائیونگ لائسنس بھی تھا جسے حاصل کرنا وہاں پر مزدوری کرنے والے ہر شخص کا خواب ہوتا ہے۔

Read more

کیا میں بیمار ہوں؟

مجھے کئی ہفتوں سے ایسا لگ رہا تھا کہ مجھے شاید کوئی بیماری لاحق ہوگئی ہے۔ کئی دنوں تک بھوکا رہنے کی عادت پڑگئی تھی، کئی کئی راتیں بغیر سوئے گزاری، چائے اور پانی پر ہی زندگی بسر کررہا تھا۔ ایسا پہلی بار نہیں ہوا، زندگی کے ان کھٹن مراحل سے کئی بار گزرنے کے…

Read more

ایک سیاسی کارکن کی دلائل بھری گفتگو

حسن اتفاق کہیے یا صرف اتفاق، گذشتہ دنوں ایک جوشیلے و جذباتی سیاسی کارکن سے پوری رات گفتگو کرنے کا موقع ملا۔ گالیوں سے بچنے کے لئے میں یہاں کسی بھی سیاسی جماعت کا نام لینے سے گریز کررہا ہوں مگر امید کی جاسکتی ہے کہ سمجھنے والے سمجھ جائیں گے کہ سیاسی جماعت کے…

Read more

صوبائی امیر جماعت اسلامی کا اے این پی کی قیادت کو بھارت جانے کا مشورہ

 ہم برسوں سے بلکہ شاید صدیوں سے یہ سنتے چلے آرہے ہیں کہ سیاست میں حرف آخر نام کی کوئی چیز موجود نہیں۔ آج کے حلیف کل کے حریف تو کل کے حلیف آج کےحریف بن سکتے ہیں۔ گذشتہ سینیٹ انتخابات میں فکری و نظریاتی دشمن (جماعت اسلامی اور اے این پی) ایک ہوگئے تھے…

Read more

پاٹا کے بارے میں سیاسی مغالطے

پاکستانی آئین کے آرٹیکل 246 بی کے مطابق چترال، دیر (اپر لوئر)، سوات، کوہستان، چترال، بونیر، شانگلہ اور ملاکنڈ اضلاع کی پہچان ایک ایسا حل طلب مسئلہ تھا کہ خود ان علاقوں میں رہنے والے لوگوں کو بھی شاید معلوم نہ ہو۔ 31 ویں آئینی ترمیم کے بعد خیبر پختون خوا، پاٹا اور فاٹا کے تمام…

Read more

گالی سے گولی تک

ناروال میں وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال پر قاتلانہ حملہ اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے جو پاکستان کی سیاست میں گالی سے شروع ہوئی اور شاید گولی پر ختم ہونے جارہی ہے۔ بحیثیت قوم اگر ہم گالی کے خلاف اٹھ کھڑے ہوجاتے تو سیاہی اور جوتا پھینکنے کے بعد گولی کے واقعات پیش نہ آتے۔…

Read more