محبت نامے برائے فروخت

سردیوں کی دھوپ تھی اور یونیورسٹی کا لان تھا۔ ایک کلاس فیلو بڑے خواب ناک انداز میں بولا؛ یار! کل ”اس“ کا برتھ ڈے ہے۔ سوچ رہا ہوں کہ ایک عدد تحفے کے ساتھ ایک غزل بھی اس کی تعریف میں لکھ کر دوں۔ موجودہ حاضرین و ناظرین کی تعداد صرف تین تھی۔ یعنی موصوف،…

Read more

لڑکی سیٹ ہو گئی

یونیورسٹی کے لان میں کچھ لڑکیاں بیٹھی تھیں۔ سردیوں کی دھوپ کا مزا لیتے خوش گپیوں میں مصروف تھیں۔ ان کے ہینڈ بیگ ان کے پاس گھاس پہ دھرے تھے، اپنی باتوں میں وہ کچھ منٹوں کے لیے ان سے غافل ہوئیں تو ایک بیگ غائب ہو گیا۔

بیگ چرانے والا کوئی چور اچکا یا کوئی اٹھائی گیر نہیں تھا بلکہ اسی یونیورسٹی کا ایک طالب علم ارسلان تھا۔ بیگ چرا کر اس نے کھولا تو حسب توقع ایک موبائل فون، شناختی کارڈ اور کچھ دیگر چیزوں کے ہمراہ چند سو روپے تھے۔

اس نے موبائل کی بیٹری نکال کر موبائل آف کر دیا اور بیگ جیکٹ میں چھپا کر ہاسٹل چلا گیا۔ کچھ گھنٹوں بعد اس نے موبائل آن کیا تو جلد ہی ایک کال آ گئی۔ اس نے کال ریسیو کی اور متانت سے بولا: کون؟

دوسری طرف نسوانی آواز ابھری: جی یہ موبائل میرا ہے، آپ کون بول رہے ہیں؟

Read more

جنس بطور رشوت

جنس بطور رشوت(Quid pro quo) دنیا بھر میں ہونے والی ایک قبیح چیز ہے۔ بیشتر خواتین نے اس کی شکایت کی ہے کہ دفاتر میں ان سے بےتکلفی کی امید رکھنا دراصل رشوت طلب کرنے جیسا ہے۔ ہمارے ہاں تو اگر کوئی خاتون ترقی کر جائے تو ہماری پست ذہنیت کے مطابق یہی فرض کیا…

Read more

مرد بےوفا کیوں ہوتے ہیں؟

اس گتھی کو سلجھانے کے لیے نجانے کتنی تحقیقات روز ہوتی ہیں اور ہر روز ایک نئی کہانی سننے کو ملتی ہے۔ جیسے یہ ہارمونز کا کیا دھرا ہے، کوئی کیمکل جسم میں پیدا ہوتا ہے جو مرد کو بےوفائی پر اکساتا ہے۔ حالات سے اسے کوئی تحریک ملتی ہے کہ وہ بہک جاتا ہے۔…

Read more

تحریم عظیم کے بلاگ”ملتان کا طوائف مرد“ پر میرا جواب

پچھلے دنوں ایک تحریر نظروں سے گزری، اکثر ہی ایسی تحاریر گزرا کرتی تھیں مگر یہ خاص تھی کیونکہ یہ تحریم عظیم کی تھی اور مقبول ترین تھی۔ سو پڑھنا واجب تھا اور پڑھ کر اس پر معترض ہونا ڈبل واجب۔ پڑھ کر چودہ طبق روشن ہو گئے۔ خاتون نے بےحیائی کی ایک داستان لکھ…

Read more

کیا عمران ہی قاتل ہے؟

میڈیا کی ہی توسط سے معلوم ہوا کہ عمران علی جس نے معصوم زینب اور سات سے دس کے قریب بچیوں کو قتل کیا، اسے سترہ نومبر کو پھانسی دی جائے گی۔ چلو ایک تو مثبت فائدہ یہ ہوا کہ کسی قاتل کو تو سزا ملی۔ یہ ایک اچھی روایت ہے کیونکہ سزا کی سنگینی…

Read more

بوائے فرینڈ، گرل فرینڈ اور شہد کے چھتے سے محبت

ہمارے معاشرے میں عورت کے کئی روپ ہیں۔ کہیں وہ ممتا سے بھرپور ہے اور کہیں وہ نفرت سے بھری ہوئی۔ کہیں اس سے بڑھ کر محبت کرنے والا کوئی نہیں اور کہیں اتنی سنگ دل کہ قتل جیسے سنگین جرائم تک میں شامل ہے۔ یہ منفی یا مثبت کردار ہونا کئی عوامل کی بنیاد…

Read more