سرکاری سکولوں کے اساتذہ کی کم از کم تنخواہ 19 ہزار، نجی میں پانچ ہزار بھی وقت پر نہیں ملتے

آزاد جموں وکشمیر میں نجی تعلیمی اداروں میں تعینات پچاس ہزار سے زائد اساتذہ حکومت کے مقرر کردہ معیار سے کئی گنا کم تنخواہوں پر پڑھا رہے ہیں جبکہ فیسوں کی وصولی کا کوئی معیار مقرر نہ ہونے کی وجہ سے سکول بھاری فیسیں وصول کرتے ہیں۔

معلمہ تسلیم اختر مظفرآباد کے جس نجی سکول میں گذشتہ چھ سال سے پڑھا رہی ہیں وہاں ان کو آج بھی ماہانہ پانچ ہزارروپے تنخواہ ملتی ہے۔ اس سکول کی کئی دوسری استانیوں کا معاوضہ تسلیم اختر کی تنخواہ کا نصف یا اس سے کچھ ہی زیادہ ہے۔ ان کے بقول: ’اگر تنخواہ بڑھانے کی بات کریں تو سکول مالکان کہتے ہیں اس تنخواہ میں نہیں پڑھا سکتیں تو نوکری چھوڑ دیں۔ ‘

Read more

مظفرآباد: خواتین کے لیے کھیلوں کا بجٹ 64 پیسے فی کس سالانہ

آزاد کشمیر میں خواتین کی آبادی 20 لاکھ جبکہ 12 لاکھ خواتین کی عمریں 30 سال سے کم ہیں۔ کھیلوں کے لیے مختص 69 لاکھ کے بجٹ میں سے خواتین پرمحض 8 لاکھ خرچ ہوتے ہیں۔ میرپور کی 21 سالہ باکسر سیرت پرویز آزاد کشمیر سے کھلاڑیوں کے اس 160 رکنی دستے کاحصہ تھیں جس…

Read more

موسمیاتی تبدیلی اور ڈینگی کے ممکنہ تعلق کا کھوج

آزاد جموں وکشمیرمیں حکام گذشتہ سال ڈینگی کے مریضوں کی تعداد میں اچانک اضافے کی وجوہات اور اس کا خطے میں ہونے والی موسمیاتی تبدیلیوں سے تعلق جاننے کی کوشش میں ہیں اور اس سلسلے میں ایک جامع تحقیقی رپورٹ مرتب کی جا رہی ہے جو ان کے بقول آئندہ سالوں میں ڈینگی اور دوسری…

Read more

جج ارشد ملک کے دستخط اصلی ہیں یا جعلی؟

کج بحثی کی انتہا ہے کہ ہمارے زیر بحث اکثر و بیشتر وہ موضوعات ہوتے ہیں جن پر سالوں بھی بحث کریں تو نتیجہ پانی میں مدھانی گھمانے جیسا ہی نکلے گا۔ جیسا کہ جج ارشد ملک کے دستخطوں کے اصلی یا جعلی ہونے کی بحث۔ دو روز سے یہ طے نہیں ہو رہا کہ…

Read more

پاکستانی صحافت معاشی سے زیادہ اخلاقی بدحالی کا شکار ہے

پاکستان میں صحافی کی نمائندہ تنظیمیں اکثر پاکستانی صحافیوں کی معاشی بدحالی پر نوحہ خواں رہتی ہیں مگر کم ہی کوئی اس اخلاقی بدحالی کا ذکر کرتا ہے جس نے پاکستانی میڈیا کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے۔ بریکنگ نیوز کی دوڑ میں شامل صحافیوں میں صحافتی اقدارکی تنزلی کی رفتار روپے کی قدر میں تنزلی سے بھی زیادہ ہے۔سوشل اور ڈیجیٹل میڈٰیا کی ترقی نے روایتی صحافت کو جھنجوڑ کر رکھا دیا۔ ایسے میں وہی صحافی اپنی پیشہ ورانہ بقاء کو یقینی بنا سکے جو ایک سے زیادہ شعبوں میں مہارت رکھتے تھے یا بدلتے حالات کے تقاضوں سے ہم آہنگ ہونے کے لیے نئے آلات اور ٹیکنالوجی کا استعمال سیکھتے رہے۔ میڈیا ہاوسز نے ڈاون سائزنگ کے ذریعے کئی کئی سال پرانے کارکنوں کو فارغ کر دیا۔ کئی روایتی اخبار اور جریدوں نے ڈیجیٹل دنیا میں اپنا مقام نہ بنایا تو اپنی اشاعت بند کرنے میں عافیت جانی۔

Read more

پاکستانی صحافت: معاشی سے زیادہ اخلاقی بحران

پاکستان میں صحافی کی نمایندہ تنظیمیں، اکثر پاکستانی صحافیوں کی معاشی بدحالی پر نوحہ خواں رہتی ہیں، مگر کم ہی کوئی اس اخلاقی بدحالی کا ذکر کرتا ہے، جس نے پاکستانی میڈیا کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے۔ بریکنگ نیوز کی دوڑ میں شامل صحافیوں میں، صحافتی اقدار کی تنزلی کی رفتار روپے کی…

Read more

مرشد واپس آ گئے

جی ہاں وہی مرشد جنہوں نے معذوری کی حالت میں بھی کئی ہفتے ریاست پاکستان کو معذور بنائے رکھا۔مرشد نے جب گستاخان کے خلاف اعلان جہاد کیا تو ان کے ہزاروں نہیں لاکھوں مرید گلی گلی شہر شہر ایسے اگ رہے تھے جیسے بارش کے بعد کھمبیاں۔ گماں ہو رہا تھا کہ یہ خدائی فوجدار کبھی بھی کسی کو بھی کہیں بھی گستاخ اور کافر کہہ کر واصل جہنم کرنے میں ایک منٹ کی تاخیر نہیں کریں گے۔مگر جب مرشد اسیر ہو ئے تو مرید ایک ایک کر کے سب کے سب غائب ہو گئے۔

Read more

رہائی مبارک ہو مرشد!

مرشد واپس آ گئے۔ جی ہاں وہی مرشد جنہوں نے معذوری کی حالت میں بھی کئی ہفتے ریاست پاکستان کو معذور بنائے رکھا۔ مرشد نے جب گستاخان کے خلاف اعلان جہاد کیا تو ان کے ہزاروں نہیں، لاکھوں مرید گلی گلی شہر شہر ایسے اگ رہے تھے جیسے بارش کے بعد کھمبیاں۔ گماں ہو رہا…

Read more

انقلاب تحریک انصاف ہی لا سکتی ہے

یقین ہو چلا کہ عمران خان کی تحریک انصاف نے قوم کے ساتھ جس انقلاب کا وعدہ کیا تھا وہ اب آ کے رہے گا۔ اہل عقل و دانش اتفاق کریں گے کہ انقلاب کی آمد کے لیے ساز گار حالات کا ہونا ضروری ہے۔ ورنہ انقلاب لانے کی کوششیں نا کام ہو جاتی ہیں۔…

Read more

او آئی سی میں بھارت کی شرکت: غیرمقبول مگر بولڈ فیصلوں کا وقت

پاکستان کے لیے یقیناً یہ کوئی آسان فیصلہ نہیں تھا مگر ان حالات میں شاہد کوئی اور چارہ کار بھی نہیں تھا۔ سفارتی سطح یہ ایک توہین آمیز اقدام ہے کہ او آئی سی کی وزرائے خارجہ کونسل میں بھارت کو رکن نہ ہونے باوجود مہمان خصوصی کے طور پر مدعو کیا جائے۔ وہ بھی…

Read more