میرے پاس تم ہو۔ ایک جائزہ

ڈرامہ میرے پاس تم ہو کئی حوالوں سے ایک یادگار ڈرامہ تھا۔ ہم اس ڈرامہ کا مختلف نکات کی صورت جائزہ لیتے ہیں۔ پہلا نکتہ عام طور پر ہوتا یہ ہے کہ ایک حقیقت ( reality ) ڈرامہ دیکھنے والوں کے ذہن میں موجود ہوتی ہے۔ یہ حقیقت ان کا تعلیمی، معاشی اور معاشرتی پس…

Read more

وزیر اعظم، پروپیگنڈا، اور عوام 

ہٹلر نے اپنی شخصیت کو اس طرح پیش کیا گویا قوم کا مسیحا ہے۔ اس کے پروپیگنڈے کے زرائع بالکل نئے تھے۔ اس نے اپنی کتاب تزک ہٹلری (kapmf Mein) میں پروپیگنڈا کے طریقوں پہ بہت کچھ لکھا ہے بلکہ یہ کہنا غلط نہ ہو گا کھ کتاب کے وہ حصے جو پروپیگنڈا تکنیک کے متعلق ہیں نہایت معنی خیز اور اہم ہیں۔ اس نے کہا

”عوام کو مسحور کرنے کے لئے کوئی خاص موضوع نہ دو بلکہ ایسا معاملہ پیش کرو جو صرف جذبات سے تعلق رکھتا ہو جو صرف بار بار کہے جانے کی وجہ سے قابل یقین ہو جائے“
اس نے کہا دشمن کے ساتھ ہمیشہ مخاصمت کا رویہ اختیار کرو کبھی صلح کی کمزوری نہ دکھاؤ۔ دشمن کے خلاف اگر جھوٹا الزام لگاؤ تو بڑا جھوٹ بولو اور اس کا بار بار اعادہ کرتے رہو۔

Read more

پروفیسر صاحب، آپ کا جینا عبادت اور مرنا شہادت ٹھہرا

استاد معاشرے کی نوک پلک سنوارتا ہے۔ خیالات اور نظریات کو تہہ در تہہ کھول کر سمجھاتا ہے۔ اپنے اور طالب علم کے درمیان علمی فرق ختم کرنے کی سرتوڑ کوشش کرتا ہے۔ نظریاتی اور نفسیاتی پیچدگیوں کا خاتمہ کر کے معاشرے کے لئے درست سمت کا تعین کرتا ہے۔ الجھنوں کو سلجھاتا ہے۔ آسانیاں…

Read more

وار جرنلزم، ایک سیاسی ہتھیار

آپ انڈین کمرشل میڈیا کی مجبوری سمجھیں، وہاں لگ بھگ 400 قومی اور ریجنل زبانوں کے نیوز چینلز ہیں۔ انٹرنیشنل چینلز ان کے علاوہ ہیں۔ لگاتار کوریج ہے۔ ایسے میں نمایاں دکھنے اور ریٹنگز لینے کے لئے بہت اونچا بولنا پڑتا ہے، یا دیکھنے والوں کو کوئی ہے سٹیریا دکھانا پڑتا ہے۔ وہاں روٹین میں بھی ایسے ہی کوریج کی جاتی ہے۔

پھر وہاں پاکستان ہمیشہ ہارڈ ٹاک کا حصہ رہتا ہے۔ سیاسی سرگرمیوں میں پاکستان کا مسلسل ذکر ہوتا ہے۔ حکمران جماعت تو ووٹ ہی پاکستان کے نام پر لیتی ہے۔ اس لئے بھی آپ کو پاکستان کا ذکر بھارتی میڈیا کی خبر میں لازمی ملے گا۔

Read more