مسئلہ کشمیر اور گلگت بلتستان کا تعلق

مودی سرکار نے 5 اگست 2019 کو آنڈین آئین کے آرٹیکل 370 اور 35 A میں ترمیم کر کے جموں و کشمیر کا اسپیشل اسٹیٹس جو 1947 میں تقسم ہند کے دوران مہاراجہ ہری سنگھ کشمیر اور بھارتی وزیر اعظم جواہر لعل نہرو کے باہمی مشاورت سے دستخط ہو کر انڈیا سے الحاق ہوا تھا…

Read more

سوشل میڈیا پر لغویت اور کردار کشی ختم ہونی چاہیے

جوں جوں انسان کے علم میں اضافہ ہوتا جاتا ہے اسی مناسبت سے اس کی شخصیت میں نکھار، معاشرے کے بارے میں فکرمندی اور تبدیلی کا خواہاں ہوتا ہے، معاشرے میں نا انصافی، غربت، اقراباپروری، تعصب جیسے معاشرتی برائیوں کا خاتمہ چاہتا ہے۔ حضرت علی علیہ السلام فرماتے ہیں ”انسان کی جتنی ہمت ہو اتنی…

Read more

گلگت بلتستان بارے معاہدہ کراچی: ایک تاریخی فراڈ

28 اپریل گلگت بلتستان اور آزاد جموں و کشمیر کی تاریخ میں وہ سیاہ دن ہے جب جموں و کشمیر کے دو نام نہاد سیاسدان سابق وزیراعظم آزاد جموں و کشمیر سردار ابراہیم، مسلم کانفرنس کے راہنما چودھری غلام عباس اور پاکستان کی طرف سے اس وقت کے رکن سندھ اسمبلی مشتاق گورمانی کے ساتھ…

Read more

آؤ جنگ لڑیں

شہادت کے جذبے سے سر شار ملک، عزت اور مذہب کے نام پر مر مٹنے کو تیار قوم کے ساتھ انڈیا کیا خاک جنگ لڑے گا؟ خیر یہ ہمارے جذبات ہیں ویسا بھی ہم جذباتی قوم ہے۔ ملک و قوم پر کبھی کوئی آنچ آنے نہیں دیں گے۔ مسلح افواج کا کام وطن کی دفاع کرنا ہے جو احسن انداز میں بخوبی اپنے فرائض سر انجام دیتے ہیں۔ شیخ رشید اور فیصل واوڈا ہتھیار اٹھا کر بارڈر پر جانے کے لیے تیار ہیں، بلکہ فیصل واوڈا اگلے مورچوں پر پہنچ کر وطن کے محافظوں کے ساتھ سیلفی بنوانے میں کامیاب بھی ہوگئے۔ شہادت کا جذبہ ہمارے دلوں میں کوٹ کوٹ کر بھرا ہوا ہے ہم کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرتے ہیں۔ مودی نے اس قوم کو للکارا ہے جو پیدا ہی شہادت پانے کے لیے ہوتی ہے۔

Read more

اپنے حصے کا دیا

مجھے یہ کہنے میں کوئی عار یا شرمندگی بالکل بھی محسوس نہیں ہوگی کہ آج ہمارا معاشرہ بے حس اور بے راہ روی کا شکار ہو چکا ہے۔ آئے روز ایک نہ ایک واقعہ ایسی رپورٹ ہوتی ہے جس کے وجوہات جان کر انسان دنگ رہ جاتا ہے اور اپنے وجود کا خدا سے گلہ کرنے پر مجبور ہوتا ہے۔ جس تیزی کے ساتھ دنیا ترقی کے منازل طے کرتی ہے اس تناسب سے ہماری ذہنی پسماندگی میں اضافہ ہوتا جاتا ہے حتیٰ کہ یہ خیال تک نہیں آتا ہے کہ اپنے اعمال پر شرمندہ ہو کر توبہ کرے اور معاشرے کی تعمیر و ترقی میں اپنا حصہ ڈالے۔

عموماً ہم اپنے لیے وکیل اور دوسرے کے لیے جج کا کردار ادا کرتے ہیں کبھی اپنے گریبان میں جھانک کر دیکھنے کی زحمت نہیں کرتے ہیں کہ میرے اندر کتنے خرابیاں ہیں جس کی وجہ سے معاشرے میں خلل پیدا ہو سکتا ہے، چونکہ معاشرے کو بنانے اور بگاڑنے میں انفرادیت کا بڑا اہم کردار ہوتا ہے۔ ہمارا پسندیدہ مشغلہ یہ ہے کہ معاشرے کی اصلاح کے لیے ہم کوئی عملی کام نہیں کرتے بلکہ دوسرے کو ذمہ دار ٹھہرا کر اپنا بوجھ ہلکا کر دیتے ہیں، حالانکہ انفرادی اصلاح کے بغیر اجتماعی اصلاح ممکن نہیں ہے۔

Read more

دیدار حسین کا قاتل کون؟

گزشتہ ہفتے تحصیل اشکومن کے بالائی گاؤں تشنلوٹ سے تعلق رکھنے والے جماعت ہفتم کے طالب علم کو نامعلوم افراد نے جنسی زیاتی کے بعد بہیمانہ طریقے سے قتل کر کے رات کے اندھیرے کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے لاش کو دریا برد کیا۔ اگلے روز لاش ملنے کے بعد دیدار حسین کے عزیز واقارب اور علاقہ مکین نے ایمت تھانہ کے سامنے ٹھٹھرتی سردی میں قاتلوں کو فلفور گرفتار کر کے کڑی سے کڑی سزا دے کر لواحقین کو انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ کردیا۔ جس پر غذر پولیس نے شک کی بنیاد پر چھے مشکوک افراد کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کی ہے۔

پولیس قانونی تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے قاتل کو عدالت پہنچا دے گی، سزا و جزا کا فیصلہ عدلیہ ہی کرے گی۔ یہ بھی ممکن ہے عدم شواہد کی بنیاد پر ملزم عدالت سے بے قصور ثابت بھی ہوسکتا ہے۔

Read more