اسد عمر: پاکستان کی سیاسی تاریخ اور بھتیجے

ہمارے خاندان کی پرم پرا اور روایات کے مطابق بیٹوں اور بھتیجوں میں کوئی فرق روا نہیں رکھا جاتا، بھتیجوں کو خاندان کی شان سمجھا جاتا ہے اور ان کے ہاتھ مضبوط کرنے، انہیں تگڑا کرنے اور انکی غلطیوں سے صرف نظر کرنے میں کسی قسم کی شرم یا عار محسوس نہیں کی جاتی بلکہ…

Read more

دیوتا بھینٹ مانگتے ہیں!

دیو مالائی دنیا بڑی پُراسرار اور عجیب ہوتی تھی۔ ملک میں قحط پڑ ے، بھوک اور غربت کا غلبہ ہو جائے یا پھر ملک معاشی بحران کا شکار ہو جائے تو یہ دیوتا کے ناراض ہونے کی نشانی ہوتی تھی۔ اُس کے غضب اور عذاب سے بچنے کے لئے راجے اور مہاراجے بھینٹ چڑھایا کرتے تھے جس سے عذاب وقتی طور پر ٹل جاتا تھا، رعایا بھی بھینٹ کا خون دیکھ کر کچھ عرصہ کے لئے مطمئن ہو جاتی تھی۔

یاد رکھیں کہ بھینٹ تب چڑھائی جاتی تھی جب راجہ سے کوئی بڑی غلطی سرزد ہو جاتی تھی۔ انسانی خون کی بھینٹ دراصل اس غلطی کا مداوا ہوتی تھی۔ اب دیومالائی دور تو ختم ہو چکا مگر لاڈلے راجہ کی حکومت ایسے مرحلے پر آگئی ہے کہ اسے اپنی غلطیوں کو بخشوانے کے لئے بھینٹ چڑھانا پڑے گی۔

آئی جی پولیس کی تبدیلی یا سیکرٹریوں کے تبادلوں کی چھوٹی اور ادنیٰ بھینٹ سے کام چلنے والا نہیں ہے۔ اسد عمر، عثمان بزدار، محمود خان اور کئی دوسرے بڑوں کو اِدھر اُدھر کرنا پڑے گا۔ ذوالفقار علی بھٹو سے دیوتا ناراض تھے، حفیظ پیرزادہ اور کوثر نیازی کی قربانی مانگتے تھے، بھٹو ضدی تھا، نہ مانا، اسی لئے خود نشانہ بن گیا۔

Read more

فرانس کی آگ

فرانس کی علامت نوٹرے ڈیم کیتھڈرل کو آگ لگی تو بہت کچھ یاد آیا۔ فرانس نے دنیا کو آزادی کی نعمت سے روشناس کرایا، خیالات کی آزادی کی آگ فرانسیسی فلاسفروں کا عطیہ ہے۔ پچھلی صدی کا مفکر ژاں پال سارتر یاد آیا اور پھر ڈیگال کا ہیولا ابھرا۔ مسلم ملک الجزائر کی تحریک آزادی…

Read more

ضمانت کی سیاست اور سال 2019، آنے والے چند ماہ کیا گل کھلائیں گے؟

حالات کا جبر کچھ ایسا ہو گیا تھا کہ سب فریقوں کو نواز شریف کی ضمانت سے ریلیف ملا ہے۔ سب کے لیے یہ ضمانت Win Win ہے۔نواز شریف کی طویل خاموشی اور علاج کے لیے ہسپتال جانے سے انکار دراصل مدافعانہ مزاحمت کی ایک نئی شکل تھی جس سے فوج، عدلیہ اور عمران حکومت تینوں پر دباؤ پڑا۔نواز شریف کی مدافعانہ مزاحمت سے یہ تاثر پختہ ہو رہا تھا کہ نواز شریف کا صرف احتساب نہیں ہو رہا بلکہ انہیں انتقام کا بھی سامنا ہے۔ پاکستان کی اسٹیبلشمنٹ نواز شریف کو اقتدار سے نکال باہر کرنے اور انکی طاقت کم کرنے کے بعد انہیں بھٹو جیسا شہید نہیں بنانا چاہتی تھی اور نہ ہی پھر سے تارا مسیح جیسے جلاد کا خطاب لینا پسند کرتی۔

Read more

جناب عالی! – آپ تاریخ بدلیں گے یا اپنی باری لے کر چلے جائیں گے؟

اِس میں ذرہ برابر بھی شک نہیں کہ جناب عالی بہت پڑھے لکھے ہیں، آئین پر مکمل دسترس رکھتے ہیں، کرپشن سے کوسوں دور ہیں، اِسی لئے کرپشن سے شدید نفرت کرتے ہیں۔ جناب بہت ہی دلیر ہیں۔ سو خطرات ہوں، جسے صحیح سمجھتے ہیں وہ کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ تاریخ کا تاج آپ…

Read more

مکالمہ خاص و عام

چوہدری عام:آپ سے غلطی ہو گئی ہے بہتر ہے اپنی غلطی تسلیم کرتے ہوئے جلدی سے اس کا ازالہ کر لیں وگرنہ زیادہ نقصان ہو جائے گا۔ چوہدری خاص:کوئی غلطی نہیں ہوئی، فیصلہ بالکل درست تھا۔ چوہدری عام:آپ کرکٹ کے شیدائی ہیں، اس کے کرشمہ سے متاثر ہوئے اور اسے پردھان بنا دیا۔ کہاں کھیل…

Read more

چوہدری عام اور چوہدری خاص میں مکالمہ

چوہدری عام: آپ سے غلطی ہو گئی ہے بہتر ہے اپنی غلطی تسلیم کرتے ہوئے جلدی سے اس کا ازالہ کر لیں وگرنہ زیادہ نقصان ہو جائے گا۔ چوہدری خاص:  کوئی غلطی نہیں ہوئی، فیصلہ بالکل درست تھا۔ چوہدری عام: آپ کرکٹ کے شیدائی ہیں، اس کے کرشمہ سے متاثر ہوئے اور اسے پردھان بنا…

Read more

یوتھ صاحب ، اب کیا ہماری جان لو گے ؟

از پرانا پاکستان 20مارچ2019ء مائی ڈیر مسٹر یوتھ! ڈھیروں پیار اور دعائیں، امید ہے تم اپنی جوانی سے بھرپور لطف اندوز ہو رہے ہو گے، آج کل تو تمہارے اِس لئے اور بھی مزے ہیں کہ بوڑھی نسل نے اقتدار ہی نوجوان نسل کو منتقل کر دیا ہے۔ علامہ اقبال نے وصیت کی تھی ’’جوانوں…

Read more

بنی نالہ کی جادو نگری سے

یہ دنیائے طلسمات ہے یہاں مادی فارمولے اور طبیعات کے قاعدے قانون نہیں چلتے اور نہ ہی یہاں دلائل وبراہین کام آتے ہیں۔ یہاں پھونک، دم اور دھاگے سے دنیا کے مشکل ترین کام چٹکی بجانے میں ہوجاتے ہیں۔ یہاں ہر کوئی راجہ اور رانی سے ٹوٹ کر محبت کرتا ہے۔ راجہ کے حسن ا…

Read more

اگر وہ مرگیا تو؟

موت ایک اٹل حقیقت ہے جس سے کسی کو مفر نہیں، کسی نے آج تو کسی نے کل جانا ہے، میں سوچتا ہوں کہ اگر وہ جیل میں مرگیا تو کیا ہوگا؟ ظاہر ہے کہ نہ ہمالہ روئے گا اور نہ وہ قومی اعزاز کے ساتھ دفن ہوگا مگر قوم کی زخمی روح کو ایک گھاؤ اور ضرور لگے گا، بھٹو کو جیل میں سزائے موت ملی تو اس قومی جرم کا خراج 9 سال کی وفاقی حکومت اور 20 سال کی سندھ حکومت میں ابھی تک ادا کیا جارہا ہے مگر خون کے دھبے مٹ نہیں پارہے، وہ نپولین بونا پورٹ نہیں ہے کہ جیل میں بیماریوں کا علاج نہ ہونے پر پراسرار موت مرا تو فرانسیسی قوم کو اس وقت تک چین نہ ملا جب کئی دہائیوں بعد تک اس کو پیرس میں لاکر دفن نہ کیا گیا۔

Read more