سیکولرزم کے بارے میں ”اکابر“ کیا کہتے ہیں؟

مولوی صاحبان یوں توہرموضوع پر ”اکابر“ کی رائے کوحرف آخرسمجھتے ہیں مگرنامعلوم وجوہ کی بنا پر، ”سیکولرازم“ بارے چند دیسی صحافیوں کی درفنطنیوں کومتفق علیہ فتوی سمجھنے لگے ہیں۔ گئے دنوں میں، تبلیغی جماعت میں بڑے زمینداروں کی ایک خاص جماعت بھی ہوا کرتی تھی۔ یاد پڑتا ہے کہ ناشتہ کے بعد کا ”انفرادی وقت“…

Read more

سیکولرزم کی اصطلاح پر کٹھ ملاؤں کے اعتراضات کی حقیقت

کیا آپ جانتے ہیں کہ کٹھ ملاؤں کی کمک کے لئے ”اسلامسٹ“ حضرات کا دستہ بھی موجود ہے؟ چونکہ کٹھ مولوی کو نور و بشر کے ایشوزکے سوا کسی معاملے کی خبرنہیں ہوتی چنانچہ یہ ”اسلامسٹ“ بٹالین ان کو جدید معلومات بہم پہنچایا کرتی ہے۔ جیسا کہ چاند پر جانے کی ویڈیو میں اگر جھنڈا…

Read more

کیا کائنات کا پہلا سیکولر ابلیس تھا؟

انسانوں کے مختلف گروہوں کے ہاں مختلف مقدسات رائج ہیں۔ ہم سیکولرز، لوگوں کے ہرگروہ کا یہ حق تسلیم کرتے ہیں کہ وہ کسی مرئی یا غیرمرئی وجود کو، کسی وجہ سے یا بغیر وجہ سے مقدس جانتا اور مانتا ہو۔ (تقدیس کا مطلب یہ کہ کسی عیب یا غلطی سے پاک ہونا) ۔ تاہم…

Read more

اسلام میں فیملی پلاننگ ممنوع نہیں بلکہ مطلوب ہے

دعوائے مضمون یہ ہے کہ اسلام دنیا کا پہلا مذہب ہے جس نے فیملی پلاننگ کا ”کانسپٹ“ دیا ہے اور اس کی ترغیب بھی دی ہے۔

مناسب ہے کہ پہلے دواصطلاحات بارے کلیئر ہو جائیں۔
فیملی یا خاندان کسے کہتے ہیں؟
فیملی مرد اورعورت کے اس جوڑے سے شروع ہوتی ہے جو میاں بیوی ہوں۔ یہ پہلا اور بنیادی یونٹ ہے۔

فیملی پلاننگ کسے کہتے ہیں؟
میاں بیوی جب اپنی فیملی کے مستقبل بارے کوئی سوچ وبچار کرتے ہیں تو اس کو ”فیملی پلاننگ“ کہتے ہیں۔ گھرداری اور روزی روٹی سے لے کر بچے پیدا کرنے اور پالنے تک کی ساری منصوبہ بندی اس میں شامل ہے مگر اہم ترین آیئٹم ”اولاد“ بارے ہوتا ہے۔

Read more

کیا بنک ملازمین، سودخور شمار ہونگے ؟

مولوی صاحبان فرماتے ہیں کہ موجودہ بنکاری سسٹم، دراصل سودی نظام ہے۔ اور یہ کہ سود، شرک کے بعد سب سے بڑا گناہ ہے۔ اور یہ کہ سود، خدا کے ساتھ اعلانِ جنگ ہے۔ اور یہ کہ سود کا کمتر درجہ بھی کراہت میں سگی ماں سے زنا برابر ہے۔ اور یہ کہ سود لینے دینے والے کے علاوہ، اس کے لکھنے والے اور اس پر گواہ بننے والے بھی اس وعید میں داخل ہیں۔

اب ایشو یہ ہے کہ اپنے بچوں کے لئے روزی روٹی کمانے والے لاکھوں بنک ملازمین، اسی وجہ سے مستقل احساس گناہ کا شکار رہتے ہیں۔ اس ذہنی دباؤ کے نتیجے میں ان کا ایک حصہ تو نوکری چھوڑ دیتا ہے جبکہ ایک حصہ، مزید گناہوں پہ جری ہو جاتا ہے ( کہ پاتے نہیں جب راہ، تو چڑھ جاتے ہیں نالے ) ۔ باقی ماندہ ملازمین، سودخوری کے طعنے سنتے جیتے رہتے ہیں۔

سوال یہ ہے کہ کیا واقعی پاکستان کا بنکاری نظام، وہی سودی نظام ہے جس بارے قرآن وحدیث میں وعید آئی ہے؟ کہیں ملتے جلتے نام وشکل کی وجہ سے ہم کسی خلطِ مبحث کا شکار تو نہیں ہیں؟

Read more

حجامہ: سنت کے نام پر ایک اور ڈرامہ

پاکستان کے ہرچھوٹے بڑے شہر میں ”حجامہ کلینک“ رواج پکڑ رہے ہیں۔ بات کاروبار تک ہوتی تو جہاں میڈیکل کے نام پر کئی اور ناٹک کھیلے جا رہے ہیں، وہاں یہ بھی سہی۔ چونکہ اسے تقدس کا رنگ دے کرعوام کو ٹریپ کیا جارہا ہے تو اس پہ لکھنا ضروری معلوم ہوا۔ مضمون ذرا طویل…

Read more

”حسب حال“ کے کلاکار

اداکارسہیل احمد (حسب حال ٹی وی شو والے عزیزی) کے لئے نہ جانے کیوں ایک احترام ومحبت کا جذبہ دل میں پاتا ہوں۔ پھرجب سے یہ معلوم ہواکہ میرے ممدوح قاضی حسین احمد مرحوم کوبھی ”حسب حال“ کامیڈی شوپسند تھا توشاید ہی میں نے اس شو کا وہ سگمنٹ کبھی چھوڑا ہو جس میں عزیزی صاحب، معاشرے کے مختلف طبقات کا سوانگ بھرتے رہتے ہیں۔ ( پس پردہ رائٹرز بھی داد کے مستحق ہیں ) ۔

مذکورہ بالا شو کے سگمنٹ میں ایک سیکوئل ایسا بھی چلا کرتا ہے جس میں ہماری سوسائٹی میں موجود تین قسم کے گلوکار مدعو کیے جاتے ہیں۔ میزبان کے سامنے تین مہمان تشریف فرما ہوتے ہیں۔ ایک تو پاپ سنگر ہے جونئی نسل میں ہاتھوں ہاتھ لیا جاتا ہے۔ دوسری جوڑی لوک گلوکاروں کی ہے جو ہمارے دیہاتی سماج میں مقبول ہوتے ہیں۔ جبکہ تیسری جوڑی کلاسیک گلوکاران، یعنی روایتی خان صاحبان کی ہے۔

Read more

سیکولر مسلمان اور عیدِ قربان

یاورعباس ہمارے مومن بھائی ہیں۔ زنجیرزنی تو کیا سینہ کوبی سے بھی بھائی کی جان جاتی ہے مگر محافلِ عاشورہ کو دل کھول کر سپانسر کیا کرتے ہیں۔ پچھلے محرم سے قبل میں نے بے تکلفی سے ایک تجویز پیش کی۔ ”یاوربھائی، ہر سال غمِ حسین میں لاکھوں لیٹر انسانی خون سڑکوں پہ بہادیا جاتا…

Read more

گدھا، گوہ اور جھینگا و کپورہ – حلال یا حرام؟

پاکستان میں آندھی طوفان کا طرح ایک ایشو اٹھتا ہے، جذباتی قوم مرنے مارنے پر تل جاتی ہے اور پھر اسی تیزی سے وہ ایشو نسیاً منسیا ہوجایا کرتا ہے۔ اگرچہ لاہوریوں کی گدھا خوری، ایک قومی جگت بن چکی ہے مگر اس ہلڑبازی میں یہ بھی تسلیم کرلیا گیا کہ پاکستان سے ہر ماہ…

Read more

احترام رمضان آرڈننس: چند گزارشات

سیکولر احباب کا موضوع ،عقائد وعبادات نہیں بلکہ زمینی حقائق ہوا کرتے ہیں- مزید یہ کہ سیکولرزم میں، کسی بھی مذہبی سرگرمی کی نہ تو تقدیس تسلیم ہے اور نہ ہی تضحیک گوارا ہے- اپنی بات کو واضح کرنے، ایک خاص گھوڑے کی مثال لے لیتے ہیں- ایک شیعہ مسلمان،اگراس گھوڑے کو ذوالجناح قرار دے…

Read more