ملین مارچ کی ناکامی کے قوی امکانات ہیں

ملین مارچ کی کامیابی کے امکانات تقریبا نہ ہونے کے برابر ہیں۔ مارچ کے ملتوی ہونے کے بھی تھوڑے سے امکانات موجود ہیں، لیکن چونکہ مولانا صاحب نے اپنے جانثاروں کو اسلام آباد کی طرف رخت سفر باندھنے کا کہہ دیا ہے، تو ہونے کا امکان زیادہ ہے۔ بہرحال چند مندرجہ ذیل وجوہ کی بنیاد…

Read more

مولانا صاحب کا قریشی سیٹھ

سنا ہے سیٹھ اتنے زور سے بلبلا اٹھے ہیں۔ کہ ایوانوں میں ذلزلہ آ رہا ہے۔ تبدیلی کے بادل سمٹ رہے ہیں۔ طوفان میں کشتی کو سنبھالنے والے ناخدا کو کشتی سے دور کیا جا رہا ہے۔ اور تو اور کسی نے یہ بھی بے پر کی آڑائی ہے۔ کہ قریشی سیٹھ کو وڈے وزیر…

Read more

پی ٹی ایم کو اپوزیشن کی تحریک کے نرغے سے دور رکھیں

اگر آپ لفظ ”استحصال“ کے معنی سے نا آشنا ہیں۔ تو اسے پوری طرح سے سمجھنے کے لئے پاکستانی سیاست کا مطالعہ شروع کر دیں۔ اگر آپ منافقت کے اصطلاحی معنی جاننا چاہتے ہیں۔ تو پاکستان کے سیاسی کرداروں کی شکل میں بہترین شاہکار موجود ہیں۔ اگر آپ لوگوں کو بہترین انداز میں دھوکہ دینے کا فن سیکھنا چاہتے ہیں۔ تو کسی پاکستانی سیاسی جماعت میں شامل ہو جائیں۔ اگر پاکستانی سیاست کے بے شمار کرداروں کو گدھ کی طرح عوام کی لاش کا تیاپانچہ کرنے سے تشبہہ دی جائے تو یہ کہنا غلط نہیں بلکہ کار ثواب ہوگا۔

Read more

پنجابی بادشاہت، وراثتی سیاست یا قائد جمہوریت مولانا فضل الرحمن؟

سنا ہے کہ اپو‌زیشن نے مولانا صاحب کو عمران خان کو وزات عظمی سے ہٹانے کے لئے قائد نامزد کیا ہے۔ سیاسی ماحول کو گرم رکھنے اور تخت کو تختہ کرنے میں مولانا صاحب کا کوئی ثانی نہیں۔ اسی لئے تو اپوزیشن نے اس امید کی بنا‎‌ پر انھیں اپنا قائد مان لیا ہے، تاکہ…

Read more

حنا کے رنگ میں پھیل چکا لہو

کیا افغانی کا ریپ اور قتل جائز ہے؟ درندوں کے بیچ جب زندگی دم توڑتی نظر آ‎ئے۔ جب ہوس کے پجاری ننھی کلیوں کو مسلتے ہوئے شیطانی کارندے بن جائیں۔ جب زندگیوں اور عزتوں کے محافظ جرم کو قانون کا جامہ پہنائیں۔ جب شیطان کے سامنے انسانی شیطانوں کا جادو سر چڑھ کر بولے۔ جب زندگی کے حسیں رنگوں میں خون کے رنگت کی امیزش لازمی ٹھرے۔ جب انسان درندہ بن کے انسانیت کا خون کرے۔ جب ظلم مصلحت اور منافقت کے دبیز چادر تلے دب جائے۔ جب ظلم کی درجہ بندی قومیت کی آڑ میں ہو۔ جب انسانوں کی بستی سے انسانیت روٹھ جائے۔ تب ایسی بستی میں ایسے سوال لا معنی ہیں۔

Read more

کیا عمران خان کی حکومت کو خطرہ ہے؟

عیدالفطر کے بعد دما دم مست ہونے کا قوی امکان ہے۔ کیوں کہ اپوزیشن سیاسی دھمال ڈالنے کے لئے سخت بے چین ہے۔ وقت کے تیور بدل رہے ہیں۔ لگتا یوں ہے کہ عمران خان کے گرد گھیرا تنگ کیا جا رہا ہے۔ اور ان کی سیاسی بساط لپیٹنے کے لئے حالات موزوں بنائے جا…

Read more

عوام الناس، باس اور کیڑے مکوڑے

”عوام الناس“ اردو اور عربی زبان کے زبردستی جوڑ توڑ سے بنایا گیا عرب و عجم کا اک سنگین قسم کا عامیانہ سا ملاپ ہے۔ خصوصا ترقی جیسی ستم ظریف ہستی کے پیچھے صرف رو رو کر ہلکان ہونے والے ناکام عاشق کی طرح دربدر ممالک میں یہ طائفہ وافر مقدار میں موجود ہے۔ تاریخ گواہ ہے، بلکہ اب تو یہ بات ایک مسلمہ حقیقت بن چکی ہے۔ کہ جس کسی کو خصوصا باس کو کبھی بھی اپنا الو سیدھا کرنا ہو تو وہ اللہ کا نام لے کر سب سے پہلے ”عوام الناس“ کے بے جان کندھوں کا سہارا لیتا ہے۔ لیکن اس کی سب سے قابل رحم صورت اس وقت سامنے آتی ہے جب کوئی خمار میں آ کے پوری کی پوری بستی کے عوام الناس کا الو سیدھا کرنے کے لئے خواہ مخواہ با الجبر و الرضا آناً فاناً بڑی تندہی اور جان فشانی سے تیوری چڑھائے پوری قوت سے ترنگ میں آکر کہہ جاتا ہے ”میرے عزیز ہم وطنو“ ۔

Read more

عمران خان نے ناممکن کو ممکن کرنا ہے

ہم غالبا دنیا کی واحد منفرد قسم کی بے حس قوم بن چکے ہیں کہ جس کے ضمیر کو جگانا تقریبا ناممکن ہو چکا ہے۔ جس نے نہ تو ماضی سے سبق سیکھا ہے۔ نہ ہی حال کو درست سمت پہ گامزن کیا ہے اور نہ ہی مستقبل کی فکر کی ہے۔ ہم اخلاقی پستی…

Read more

قوم شہباز شریف کی وزارت عظمی سے بچ گئی

قوم کی خوش قسمتی اور شہباز شریف کی بدقسمتی دیکھیے کہ آخرکار شہباز شریف کے وزارت عظمی کے خواب چکنا چور ہوئے۔ اور ساتھ ہی ساتھ ان کے وزارت اعلی کے دور کا خاتمہ بھی ہوا ۔ یعنی نہ خدا ہی ملا نہ وصال صنم ۔ اگر خدا نخواستہ شہباز شریف وزیر اعظم بن جاتے…

Read more

پرویز خٹک دوبارہ وزیر اعلی کیلئے موزوں ہیں

پرویز خٹک کے دوبارہ وزیراعلی بننے میں کوئی عیب نہیں۔ انھوں نے تجربے، صلاحیتوں اور ٹیم ورک سے پارٹی کو 65 سیٹوں کے ساتھ بہترین پوزیشن پہ لا کھڑا کیا ہے۔ اور یہ ان کی اور پارٹی کی کارکردگی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ تحریک انصاف کو انھیں کوئی اور ذمہ داری سونپنے سے گریز…

Read more