لال لال ”لہروانے“ والے ”سفید“ ہاتھی

یاسر پیر زادہ کا شمار اس ناچیز کے پسندیدہ کالم نگاروں میں ہوتا ہے، وجہ یہ ہے کہ انہوں نے اپنے کالم کا مستقل عنوان ”ذرا ہٹ کے“ پسند کیا ہے تو اس عنوان کا پاس کرتے ہوئے وہ ہمیشہ لکھتے بھی ذرا ہٹ کے ہیں، ورنہ یہاں تو حالت یہ ہے کہ لوگ اپنے…

Read more

ابن رشد کے پانچ سیاسی و سماجی افکار

انسانوں کی سیاسی و اجتماعی امور کے باب میں عقلی اور استدلالی مطالعات کا نام ’سیاسی فلسفہ‘ یا ’فلسفہ سیاست‘ ہے۔ اس موضوع پر لاک، سٹوارٹ مل، ہابس، روسو، کارل مارکس اور ان کے علاوہ متعدد مغربی دانشمندوں کے آراء معروف ہیں۔ ان مفکرین سے بھی پہلے افلاطون اور ارسطو نے بھی براہ راست اور مستقل ان مسائل سے بحث کیا ہے۔ فلسفہ سیاست یعنی اس خاص نوع کا تعقل وتفکر اور بحث واستدلال ہمیشہ سے ہر انسانی تمدن کے لیے غور وفکر کا موضوع رہاہے بشمول مسلمانوں کے۔

Read more

قائداعظم کا نصب العین اور تین اہم سوالات

بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح برصغیر کی گزشتہ صدی کی سیاست کا بلاشبہ ایک اہم کردار رہے اس کردار کا فکر وسوچ اوران کا عرض مدعا گویا کہ اب تک بھی نظروں سے اوجھل اور اظہار سے عاجز ہے ایک مسلسل ابلاغی اورتبلیغی مہم کے ذریعے قائد اعظم کے تصور مملکت کواس انداز میں…

Read more

کیا علم مابعد الطبعیات سے مراد ماوراء الطبعیات ہی ہوتے ہیں؟

یہ عجیب المیہ ہے کہ اوہام اور بے بنیاد خیالات سے سائنس کی مدد سے چھٹکارا پانے کے بعد انسان اب جاکر اس حدتک دوسرے انتہا پر کھڑا ہوگیا کہ اب اس کی تجربیت پسند مزاج کے نزدیک کل موجودات کے درمیان ایک ہی تقسیم پائی جاتی ہے۔ دنیا کے تمام اشیا اور علوم یا…

Read more

ایران کی علامہ اقبال سے شناسائی میں تاخیر کیوں ہوئی ؟

قیام پاکستان کے بعد کے ابتدائی برسوں سے ایران ہمارا اس طرح بڑا بھائی تھا جیسا کہ آج کل ہم سعودی عرب کے چھوٹے بھائی ہیں ، ان دونوں نہ اسلام آباد کاوجود تھا نہ ہی فیصل مسجد کا ، جب اسلام آباد وجود میں آگیا تو اسے راولپنڈی سے ملانے والی مری روڈ کانام…

Read more

داتا گنج بخش اور کشف المحجوب، ذرا مختلف زاویے سے

علی عثمان ہجویری کی عرس کے مناسبت سے جناب حامد میر کا کالم ”مرشد کی تلاش“ شائع ہوا ہے۔ 27 اکتوبر کو داتا صاحب کی عرس کے موقع پر لاہور میں داتا گنج بخش عالمی کانفرنس منعقد ہوئی جس میں درجن بھر ممالک سے مندوبین نے شرکت کرکے داتا صاحب کو خراج عقیدت پیش کیا۔…

Read more

سید کاشف رضا کاناول چار درویش اور ایک کچھوا

سید کاشف رضا کا پہلا ناول ”چار درویش اور ایک کچھوا“ ہمارے اردگرد کی حقیقتوں کے اوپر تہہ بر تہہ پڑے ہویے پرتوں کو اتارنے کی ایک گستاخ اور بے باک کوشش ہے۔ پڑھنے والا اس ناول کے ہرباب کو ایک ایک مستقل تھیم سمجھ کر آگے بڑھتا ہے لیکن اختتام تک پہنچتے پہنچتے یہ…

Read more

کیا سید جمال الدین افغانی ، افغانی نہیں تھے ؟

ایک معاصر ویب سائیٹ پر شائع ہونے والے مضمون میں دعوی کیا گیا ہے کہ سید جمال الدین افغانی اپنے اصل ونسب اور جائے پیدایش کے اعتبار سے ایرانی تھے نہ کہ افغانی۔ اس موضوع کے حوالے سے اپنے گزارشات پیش کرنے سے پہلے یہ وضاحت ضروری ہے کہ یہ خادم دوستوں کی مجلس میں…

Read more

نیوٹن، سیب اور کشش ثقل کی مثلث

10 اکتوبر کو یاسر پیرزادہ نے کیمبرج کی روداد پر مشتمل اپنے کالم میں لکھا کہ ” جب ہم ٹرینٹی کالج کے دروازے پر پہنچے تو ہم نے اس درخت کے بارے میں پوچھا جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ نیوٹن اس درخت کے نیچے بیٹھا تھا جب اس کے سر پر سیب…

Read more

میکسیکو کا صدر عمران خان کے نقش قدم پر

یہ میکسیکو کا صدر ہے۔ پچھلے سال انہوں نے ” نیامیکسیکو“ بنانے کی منشور پر عوام سے ووٹ مانگ لیے اور لوگوں نے دے بھی دیے۔ ان سے پہلے میکسیکو کا جوصدر تھا انہوں نے صدر مملکت کی سواری کے لئے 218 ملین ڈالرز سے ایک لوکس طیارہ خریداتھا۔ لیکن نومنتخب صدر لوپیز اوبراڈور (…

Read more